بریکنگ نیوز: (ن) لیگی رہنما برجیس طاہر پر قسمت مہربان، لاہور ہائیکورٹ سے بڑی خوشخبری مل گئی

لاہور (ویب ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ نے نیب کو لیگی ایم این اے برجیس طاہر کو 8 جولائی تک گرفتار کرنے سے روک دیا۔جسٹس سردار احمد نعیم کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے برجیس طاہر کی عبوری ضمانت کی درخواست پر سماعت کی، نیب کی جانب سے برجیس طاہر کی درخواست پر جواب جمع کرا دیا گیا،

درخواست گزار کا موقف تھا نیب درخواست گزار کیخلاف 2003 میں انکوائری بند کر چکا ہے ،نیب نے جولائی 2019 میں اثاثہ جات انکوائری میں طلبی کا نوٹس بھیجا اور طلب کیا، ابنیب نے درج شکایت کو انویسٹی گیشن میں تبدیل کر دیا ہے اور گرفتاری کا خدشہ ہے ، استدعا ہے عدالت درخواست ضمانت قبل از گرفتاری منظور کرے ، دلائل کے بعدعدالت نے برجیس طاہر کی ضمانت میں 8 جولائی تک توسیع کرتے ہوئے نیب کو گرفتاری سے روک دیا۔ لاہور ہائیکورٹ میں لیگی ایم این اے برجیس طاہر کی عبوری درخواست ضمانت پر سماعت میں فاضل عدالت نے برجیس طاہر کی ضمانت میں 8 جولائی تک توسیع کر دی. نیب کی جانب سے برجیس طاہر کی درخواست پر جواب جمع کرا دیا گیا .عدالت نے نیب کو برجیس طاہر کو 8 جولائی تک گرفتار کرنے سے روک دیا. لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس سردار احمد نعیم کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے سماعت کی۔ درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ درخواست گزار کیخلاف 2003 میں نیب انکوائری بند کر چکا ہے نیب نے جولائی 2019 میں طلبی کا نوٹس بھیجا اور طلب کیا ہے, نیب نے درج شکایت کو انویسٹی گیشن میں تبدیل کردیا ہے، گرفتاری کا خدشہ ہے صاف اور شفاف احتساب کا حمایتی ہوں لیکن انصاف ہوتا نظر آنا چاہیے ,عدالت سے استدعا ہے کہ درخواست ضمانت قبل از گرفتاری منظور کرے۔