بزرگ شہریوں اور پینشنرز کیلئے خوشی کی خبر!!! رواں ماہ 6500 نہیں بلکہ کتنے روپے ملیں گے؟ حکومت نے دیرینہ مسئلہ حل کردیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) حکومت کا بزرگ پنشنرز کو اپریل میں ساڑھے 12 ہزار روپے دینے کا اعلان، یکم جنوری سے پنشن 6500 سے بڑھا کر 8500 کرنے کا اعلان کیا گیا تھا، اپریل سے پنشنرز کو 8ہزار 500 روپے ماہانہ، جبکہ بقایاجات کی مد میں4000 روپے بھی ادا کیے جائیں گے ۔

تفصیلات کے مطابق حکومت کی جانب سے ای اوبی آئی کی پنشنرز کے لیے بڑی خوشخبری سنائی گئی ہے ۔ ای اوبی آئی کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ تمام بزرگ پنشنرز کو یکم اپریل سے 8ہزار500روپے ماہانہ ادا کیے جائیں گے. اپریل کے ماہ میں پنشنرز کو بقایا جات کی مد میں4000روپے بھی ادا کیے جائیں گے. یوں اپریل کے ماہ میں پنشنرز کے اکاؤنٹ میں 12ہزار500روپےآئیں گے. یہاں واضح رہے کہ حکومت پاکستان نے یکم جنوری سے پنشن 20 فیصد اضافے سے 6500 سے بڑھا کر8500کرنےکا اعلان کیا تھا۔ حکومت کے اس فیصلے کی منظوری گزشتہ ماہ دی گئی تھی، جبکہ اب اس کا اطلاق اپریل کے ماہ سے کیا جائے گا. اس حوالے سے وزیراعظم کے مشیر برائے اوورسیز پاکستانیز زلفی بخاری نے اس عزم کا اظہار کیا تھا کہ ای او بی آئی کو ایک منافع بخش ادارہ بنانے کے بعد بزرگ پنشنرز کی پنشن 15 ہزار روپے ماہانہ تک لے کر جائیں گے۔ اس سے قبل وزیراعظم کی جانب سے کیے گئے ٹوئٹ میں اعلان کیا گیا تھا کہ ہماری حکومت نے1 سال میں ای او بی آئی کے بزرگ پنشنرزکوملنےوالی رقم 62 فیصد اضافے کیساتھ 5250 سےبڑھاکر 8500 روپےکردی ہےجس سے پنشنرزکو ریٹائرمنٹ کےبعد کے ایام میں مالی تحفظ فراہم کرنےمیں مدد ملےگی۔ اس سرمائے کاکثیرحصہ خود ادارے کی اصلاح سےحاصل ہورہاہے۔ یاد رہے کہ اپریل سے پنشنرز کو 8ہزار 500 روپے ماہانہ، جبکہ بقایاجات کی مد میں4000 روپے بھی ادا کیے جائیں گے۔