مسلمانوں کا کپتان: ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی کم کرنے کے لیے عمران خان نے پس پردہ ایسا کیا کر ڈالا کہ امریکہ بھی تعریف کرنے پر مجبور ہوگیا ؟

واشنگٹن (ویب ڈیسک) امریکی اسٹیٹ ڈیبارٹمنٹ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ایران کے ساتھ کشیدگی کم کرنے کیلئے عمران خان کی کوششیں قابل فخر ہیں۔ عمران خان دنیا کے ان رہنماؤں میں سے ایک ہیں کو تناؤ ختم کرنے کیلئے آف دی ریمپ ڈپلومیسی میں مصروف عمل نظر آئے۔ امریکی عہدیدار نے بریفنگ میں کہا کہ

صرف امریکہ ہی نہیں ایران نے بھی عمران خان کو پیشکش کی، عالمی رہنما خامنہ ای کو آمادہ کرنے میں ناکام ہوئے۔ امریکی اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کے عہدیدار نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان دنیا کے ان رہنماؤں میں سے ہیں جو ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی میں کمی کے لئے آف دی ریمپ ڈپلومیسی میں مصروف عمل نظر آئے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق موجودہ امریکہ ایران تنازع پر بریفنگ کے دوران عہدیدار نے کہا کہ آف دی ریمپ یہاں 3 سال سے ہے اور یہ صرف ہم نہیں ایرانی بھی اس کی پیشکش کرتے رہے ہیں۔ عہدیدار نے کہا فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکروں، جاپان کے وزیر اعظم شنزوابے، پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان اور عمان کے سلطان دینا کے تمام حصوں سے ان تمام ممالک نے ایران میں حکومت سے رابطہ کیا ہے۔ واشنگٹن میں امریکی اسٹیٹ ڈیبارٹمنٹ کے عہدیدار نے دعویٰ کیا ہے کہ عالمی رہنما ایران کے سپریم لیڈر کو بہتر فیصلہ لینے پر آمادہ کرنے میں ناکام ہو گئے ہیں، جس کی وجہ سے امریکہ معاشی پابندیوں اور جنرل قاسم سلیمانی کے قتل جیسے اقدامات اٹھانے پر مجبور ہوا۔