’’جتنی جلدی ہو سکے آصف زرداری کو جیل میں اس سہولت سے محروم کر دیا جائے ورنہ۔۔۔‘‘ جیل حکام کو یہ حکم کس نے اور کیوں دے ڈالا؟ بڑی خبر

اسلام آباد (ویب ڈیسک) احتساب عدالت نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری کو ایئرکنڈیشنر کی سہولت کی فراہمی طبی ماہرین کی رائے سے مشروط کر دی۔تفصیلات کے مطابق تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کی احتساب عدالت میں جعلی اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری کو جیل میں سہولیات فراہمی سے

متعلق درخواست پر سماعت ہوئی ۔جج محمد بشیر نے آصف علی زرداری کی جیل میں سہولیات کی فراہمی کی درخواست پر محفوظ فیصلہ سنادیا، فیصلے میں عدالت نے آصف علی زرداری کو ایئرکنڈیشنر کی سہولت کی فراہمی طبی ماہرین کی رائے سے مشروط کر دی اور آصف زرداری کی اے سی فراہم کرنے کی درخواست ہدایت کے ساتھ نمٹا دی۔گذشتہ روز احتساب عدالت اسلام آباد نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری کو جیل میں سہولیات فراہمی سے متعلق درخواست پر کارروائی ملتوی کردی تھی۔یاد رہے 5ستمبر کو احتساب عدالت نے سابق صدر آصف زرداری کو جیل میں اے سی سمیت دیگر لگژری سہولیات فراہم کرنے کے معاملے پر محفوظ فیصلہ کیا تھا۔گذشتہ سماعت میں وکیل آصف زر داری لطیف کھوسہ کا کہنا تھا کہ آصف زرداری کو جیل میں اے کی سہولت نہ دے کر عدالتی حکم کی خلاف ورزی کی گئی، جس پر جج نے آصف زر داری سے استفار کیا کہ اسی جیل میں آپ کو اے سی کی سہولت دی گئی تھی۔جس پر آصف علی زر داری نے کہا تھا کہ اس عدالت اور تمام عدالتوں میں یہ سہولتیں دی گئی تھیں جبکہ لطیف کھوسہ کا کہنا تھا کہ عدالتی حکم کے باوجود اے سی اور فریج کی سہولت نہیں دی گئی۔یاد رہے 20 اگست کو احتساب عدالت نے سابق صدرآصف زرداری اور فریال تالپورکوجیل میں اے کلاس دینے کی درخواستیں مسترد کردیں تھیں اور اضافی سہولتیں دینے کی منظوری دیتے ہوئے ہفتے میں 2 دفعہ اہل خانہ سےملاقات کی اجازت دی تھی۔