گستاخانہ خاکوں پر ہمارا جواب آج بھی وہی ہے جو اہل مدینہ نے دیا تھا۔۔۔!!! ترک صدر طیب اردگان نے دشمنان اسلام کے نام کھلا پیغام جاری کردیا

انقرہ (ویب ڈیسک) ترک صدر کا کہنا ہے کہ گستاخانہ خاکوں پر ہمارا جواب آج بھی وہی ہے جو اہل مدینہ نے دیا تھا…طلع البدر علینا۔ تفصیلات کے مطابق ترک صدر طیب اردگان کی جانب سے مسلمان دشمنوں اور حضرت محمدﷺ کی شان میں گستاخی کرنے والوں کو منہ توڑ جواب دے کر کروڑوں مسلمانوں

کے دل جیت لیے گئے ہیں۔ ترک صدر کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر گردش کر رہی ہے جس میں وہ اپنی پارلیمنٹ سے خطاب کرتے ہوئے حضرت محمدﷺ کی شان میں گستاخی کرنے والوں کو جواب دے رہے ہیں۔طیب اردگان نے کہا کہ مکہ مدینہ، ایشیا افریقہ یورپ سمیت پوری دنیا اور تمام جہانوں اور زمانوں کو شرف بخشنے والے اپنے نبی ﷺ پر حملوں کے سامنے پورے صدق و اخلاص کے ساتھ کھڑے ہونا ہمارے لیے عزت و شرف کا مسئلہ ہے۔طیب اردگان نے دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ گستاخانہ خاکوں پر ہمارا جواب آج بھی وہی ہے جو اہل مدینہ نے دیا تھا…طلع البدر علینا۔اس سے قبل جاری ایک بیان میں ترک صدر طیب اردگان کی جانب سے مسلمانوں کیخلاف مہم پر یورپ کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔ ترک صدر کا کہنا ہے کہ کوئی بھی حقیقی مسلمان دہشتگرد نہیں ہو سکتا، وہ مسلمان ہی نہیں جو دہشتگرد ہے اور جو دہشتگردی کرتا ہے وہ حقیقی مسلمان نہیں۔ ترک صدر نے کہا کہ بدقسمتی سے ہم اس دور میں ہیں جب اسلام اور مسلمانوں سے دشمنی اور مقدس ہستیوں کی توہین کینسر کی طرح پھیل رہی ہے ان اشتعال انگیزیوں پر اسلام کے خلاف حملوں اور گستاخانہ خاکوں پر مسلمانوں کا کھڑے ہونا اعزاز کی بات ہے۔مغربی ملک دوبارہ صلیبی جنگ شروع کرنا چاہتے ہیں، برائی اور نفرت کے بیچ پھر سے بوئے جارہے ہیں جس سے امن تباہ ہوا ہے۔ ترکی اسلاموفوبیا کو قومی سلامتی کا مسئلہ سمجھتا ہے، یورپی یونین کی اولین ذمے داری ہے کہ اسلام کے خلاف منافرت کو روکے، اس معاملے کو اب مزید نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔ یورپ میں نفرت کا پھیلاؤ روکنے کے لیے فرانسیسی صدر کی پالیسیوں کو روکنا چاہیے اور انہیں سمجھانے کی کوشش کرنی چاہیے۔