کرونا وائر س کے وار جاری !لیکن کونسی بیماری منہ کھولے آپ کی جانب بڑھ رہی ہے؟ بل گیٹس کا خوفناک انکشاف

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) بل گیٹس دنیا کو خبردار کیا ہے کہ اگرچہ کورونا وائرس کی وبا ہر جگہ پھیل رہی ہے مگر مچھر اب بھی سب سے زیادہ ہلاکتوں کا باعث بننے والا جاندار ہے۔17اگست کو اپنے گیٹس بلاگ میں بل گیٹس نے مچھروں کا ہفتہ منانے کا اعلان کیا جس کے دوران مختلف ویڈیوز اور مضامین کے ذریعےمچھر کی

ہلاکت خیزی کے موضوع کوواضح کیا ۔ مائیکرو سافٹ بانی نے کہا ہے کہ ہر رات یہ ننھے کیڑے لاکھوں افراد کو ملیریا سے مبتلا کرتے ہیں ، جس سے ہر دوسرے منٹ میں ایک بچہ ہلاک ہورہا ہے۔ان کا کہناتھا کہ مچھر سماجی دوری کی مشق نہیں کرتے، وہ ماسک نہیں بھی نہیں پہنتے، مائیکروسافٹ کے بانی اور دنیا کے امیرترین افراد میں شامل بل گیٹس کا کہنا ہے کہ کورونا وبا 2021 کے آخر میں ختم ہو جائے گی مگر اس سے قبل وہ غریب ممالک میں لاکھوں افراد کو ہلاک کر دے گی۔دی اکنامسٹ کے ایڈیٹر ان چیف زینی منٹن سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ تمام ہلاکتیں براہ راست کورونا کے باعث نہیں ہوں گی بلکہ مریضوں کی بڑی تعداد کے سبب صحت کے نظام اور معیشتوں پر دباؤ بھی اس کی اہم وجہ ہو گی۔ان کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے دیگر بیماریوں کے خلاف ویکسین اور ادویات کی فراہمی میں رکاوٹیں پیدا ہو جاتی ہیں جس سے ملیریا اور ایڈز سے ہونے والی اموات میں اضافہ ہو گا۔انہوں نے کہا کہ اس کے ساتھ ساتھ کم ہوتی زرعی پیداوار کے باعث بڑے پیمانے پر بھوک کا مسئلہ پیدا ہو گا جبکہ تعلیم کی شرح میں کمی آئے گی۔انہوں نے امریکہ میں کورونا وائرس پر ہونے والی سیاست اور سازشی نظریات کے پھیلاؤ پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان دونوں وجوہات نے کورونا وبا کے خلاف کوششوں کی رفتار سست کر دی ہے۔انہوں نے یہ پیش گوئی کی کہ 2021 کے آخر تک کورونا کی موثر ویکسین دنیا کے زیادہ تر افراد تک پہنچ جائے گی اور بڑی آبادی میں وائرس کے خلاف قوت مدافعت پیدا ہونے کی وجہ سے وبا کا خاتمہ ہو جائے گا۔انہوں نے نشاندہی کی کہ کورونا وائرس کی وبا کے نتیجے میں ملیریا کی روک تھام اور علاج کی سہولیات بری طرح متاثر ہوئی ہیں،جس کی وجہ سے ہلاکتوں کا واضح خطرہ موجود ہے ۔