بریکنگ نیوز:

واشنگٹن (ویب ڈیسک) شمالی کوریا تیزی سے جوہری ہتھیاروں کے حصول کی جانب بڑھ رہا ہے۔ یہ انکشاف منگل چار اگست کو سامنے آنے والی اقوام متحدہ کی ایک خفیہ رپورٹ میں کیا گیا ہے۔ رپورٹ میں سفارتی ذرائع کے حوالے سے لکھا ہے کہ پیانگ یانگ نے چھوٹی جوہری ڈیوائسز تیار کر لی ہیں،

جنہیں بیلسٹک میزائلوں پر نصب کیا جا سکتا ہے۔ اس رپورٹ میں ایسی تمام تر خفیہ معلومات کا ذریعہ شمالی کوریا کا ایک پڑوسی ملک بتایا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق شمالی کوریا کا جوہری پروگرام بھی جاری ہے اور یورینیم کی افزودگی کا عمل بھی جاری ہے۔ ذرائع کے مطابق جلد شمالی کوریا ایٹمی تجربہ کر سکتا ہے اور اس طرح ایٹمی طاقت کا روپ دھار سکتا ہے ، دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق امریکہ میں تقریباً 70 فیصد نوجوان شہری جوہری ہتھیاروں کو غیر ضروری سمجھتے ہیں۔ جاپانی نشریاتی ادارے نے ہیروشیما اور ناگاساکی پر ایٹم گرانے کو 75 سال مکمل ہونے سے قبل 18 سے 34 سال تک کی عمر کے افراد کے 3 گروپوں سے یہ آن لائن جائزہ لیا۔ پہلا گروپ ہیروشیما پریفیکچر کے باسیوں کا، دوسرا اس کے علاوہ جاپان کے دیگر علاقوں کے شہریوں کا، اور تیسرا گروپ امریکہ میں رہائش پذیر افراد کا تھا۔ ہر گروپ سے تقریباً ایک ہزار افراد نے سوالوں کے جواب دیے۔اِس سوال پر کہ آیا جوہری ہتھیار ضروری ہیں یا نہیں، جاپان کے تقریباً 85 فیصد افراد نے کہا کہ اِن کی ضرورت نہیں ہے۔ امریکی گروپ کے تقریباً 70 فیصد افراد نے یہی جواب دیا۔زیادہ تر لوگوں نے جس وجہ کا انتخاب کیا کہ وہ یہ تھی کہ ایسے ہتھیار بڑی تعداد میں لوگوں کو موت کی وادی میں دھکیل دیتے ہیں ۔ دیگر جواب دہندگان نے جوہری ہتھیاروں کی حد سے زیادہ تباہ کْن طاقت کو اس کی وجہ قرار دیا اور بین الاقوامی تنازعات کے حل کے مختلف طریقوں کی نشاندہی کی۔