چین نے نہ 10 نہ 20 بلکہ کتنے بھارتی فوج مار دیے ؟بھارتی فوج نے تصدیق کر دی

لداخ (ویب ڈیسک) چین نے 20 بھارتی فوجی مار دیے، ہلاکتوں کی تعداد زیادہ بھی ہوسکتی ہے، بھارتی فوج نے تصدیق کردی، بھارتی صحافی راہول کنول نے بتایا ہے کہ بھارتی فوج نے تصدیق کی ہے کہ لداخ میں 20 بھارتی فوجی مارے گئے ہیں جبکہ اس تعداد میں مزید اضافہ ہوسکتا ہے۔ انہوں نے اس امکان


کی تصدیق کی ہے کہ ایل اے سی پر چین اعر بھارت کے مابین تناؤ بڑھتا جارہا ہے۔ایک اور بھارتی صحافی اشوک سوائن نے بتایا ہے کہ لداخ میں 20 فوجی مر چکے ہیں، مودی سرکار جو کہے اس پر یقین نہیں کیا جا سکتا، انہوں نے کہا کہ پہلے ہی کہہ دیا تھا کہ ہلاکتوں کی تعداد زیادہ ہے۔دوسری جانب برطانوی اخبار نے اس حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ بھارت کو خود بھی اس بات کے بارے میں علم نہیں ہے کہ جوان زندہ ہیں یا مارے گئے ہیں۔ان لاپتا ہونے والے فوجیوں کے بارے میں حتمی طور پر یہ اطلاع موصول نہیں ہوئی کہ وہ زندہ یا مارے جاچکے ہیں۔ یہ واقعہ ایک ایسے موقع پر رونما ہوا ہے جب دونوں ملکوں کے درمیان کئی ہفتوں سے سرحد پر تناﺅ جاری ہے اور فریقین کی جانب سے اضافے دستے سرحد پر تعینات کردیے گئے تھے‘ساڑھے تین ہزار کلومیٹر طویل سرحد پر جوہری طاقت کے حامل دونوں ملکوں کی فوجوں کے درمیان مستقل بنیادوں پر جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں، یہاں باقاعدہ طور پر سرحد پر حد بندی نہیں کی گئی لیکن کئی دہائیوں سے یہاں ایک بھی ہلاکت نہیں ہوئی تھی. بھارتی فوج کا کہنا ہے کہ دونوں اطراف اموات ہوئی ہیں لیکن چین نے کسی بھی اہلکار کے ہلاک یا زخمی ہونے کی تصدیق نہیں کی اور پورا الزام بھارت پر عائد کیا ہے.دوسری جانب سینئر صحافی صابر شاکر کا کہنا ہے کہ راجھستان سیکٹر میں بھارتی فوج کی غیر معمولی نقل و حرکت کی اطلاعات ملی ہیں، چینی فوج سے مار کھانے کے بعد مودی سرکار اپنی عوام کو مطمئن کرنے کیلئے پاکستان کیساتھ چھیڑ چھاڑ کرنا چاہتی ہے، پاکستان نے بھی جواب دینے کی تیاری کر رکھی ہے۔تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی صابر شاکر کی جانب سے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے دعویٰ کیا گیا ہے کہ پاکستان کی سرحد کیساتھ راجھستان سیکٹر میں بھارتی فوج کی غیر معمولی موومنٹ کی اطلاعات ملی ہیں۔پاکستان کی اعلی سول و عسکری قیادت اس تمام صورتحال سے آگاہ ہے اور پاکستان بھارت کی کسی بھی جارحیت کا مقابلہ کرنے، بھرپور جواب دینے کیلئے تیار ہے۔