اسے کہتے ہیں جیسے کو تیسا!!! ہندو مسلم سیاست نے بھارت کو کمزور کردیا، بھارتی شہری نے اپنی لاچار حکومت کو آئینہ دکھا دیا

نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارتی نوجوان نے اپنی حکومت کو آئینہ دکھاتے ہوئے ہوئے کہا کہ سیاسی حکومتوں نے ہندوستانیوں کو آپس میں لڑوا کر اور ہندو مسلم سیاست کرکے بھارت کو اس قدر کمزور کردیا ہے کہ اب چین اور نیپال بھارت سے جنگ لڑنے کو تیار بیٹھے ہیں۔

یوٹیوب پر بھارتی وی لاگر نے اپنی ویڈیو میں بھارت چین کی لداخ میں ٹینشن کا ذمہ دار اپنی ہی حکومت کو ٹھہراتے ہوئے کہا کہ جب ملک کو مضبوط کرکے اسے ترقی کی طرف لے کر جانا تھا ایسے میں یہاں ہندو مسلم دنگے کروائے گئے ، دہلی فسادات اس کی جیتی جاگتی مثال ہیں ، مسلمانوں کو کاٹا پیٹا گیا لیکن جب آگ لگتی ہے تو دونوں طرف کے گھر جلتے ہیں ۔ انہوں نے مودی کے سپورٹروں کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ یہ سچ سننے کی ہمت ہی نہیں رکھتے میری ویڈیوز کے کمنٹ سیکشن میں جاکر دیکھیں یہ بنا سوچے گالیاں دینا جانتے ہیں ، یہ ہندوتوا کی بات کرتے ہیں ہندو مذہب کا پہلا ملک نیپال ہے اس حساب سے وہ بھارت کا بھائی ہونا چاہیے لیکن آج وہ جنگ کی دھمکیاں دے رہا ہے، کیونکہ آپ کے ملک میں سیاست کی ایک ہی بنیاد ہے وہ ہے ہندو مسلم بس۔ انہوں نے مودی اور آر ایس ایس کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یہ جو آر ایس ایس کی فوج ہے اسے نیپال لڑنے بھیجیں ، پاکستان یا چین کی سرحدوں پر لڑائی کیلئے بھیجیں ،میری بات لکھ لیں ان میں دم نہیں ہے وہاں جانے کا بھی، لیکن ہاں جہاں ملک میں مسلمانوں پر ظلم کرنا ہو وہاں یہ اپنے بھگوانوں کا نعرہ لگاکر پہنچ جاتے ہیں مسلمانوں کو کاٹنے ، مسلمانوں کے گھروں کوآگ لگانے پہنچ جائیں گے۔ بھارتی نوجوان نے کہا کہ ہندوؤں کے دلوں میں حکمرانوں نے اتنا زہر بھر دیا ہے کہ یہ اٹھتے بیٹھتے بس مسلمانوں کو کاٹنے مارنے کا سوچتے ہیں اور میرے پاس اس کا ثبوت موجود ہے میری ویڈیو ز کے کمنٹ سیکشن میں جاکر دیکھیں آپ کو ہر ہندو مسلمانو ں کو گالیاں دیتا اور جان سے مارنے کی دھمکیاں دیتا نظر آئے گا۔