خوبصورت چہروں کے رنگین کارنامے : اس تصویر میں نظر آنے والی یہ لڑکی سب سے چھپ کر کیا کام کرتی تھی ؟ جانتے ہی سب نے سر پکڑ لیے

نیویارک (ویب ڈیسک) امریکی ریاست مونٹانا میں پریسلے پریچرڈ نامی لڑکی فائرفائٹر کی نوکری کرتی تھی جسے گزشتہ سال ملازمت سے نکال دیا گیا تھا۔ دی مرر کے مطابق اب پریسلے نے پہلی بار اس معاملے پر زبان کھولی ہے اور ادارے کے حکام پر سنگین الزام عائد کر دیا ہے۔

پریسلے کا کہنا ہے کہ اسے حکام نے سوشل میڈیا اکاﺅنٹس پر اپنی فحش تصاویر پوسٹ کرنے کی وجہ سے نوکری سے نکالا۔ اس نے اپنے حکام پر صنفی امتیاز برتنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ایسی تصاویر مردلگائیں تو کوئی مسئلہ نہیں لیکن مجھے نوکری سے نکال دیا گیا کیونکہ میں لڑکی تھی۔ 27سالہ پریسلے نے مزید کہا کہ ”میں ایورگرین فائر ریسکیو میں کام کرتی تھی، جس کے حکام کا کہنا تھا کہ میری جم میں ورزش کرتے یا بکنی میں بنائی گئی تصاویر ادارے کی بدنامی کا باعث بن رہی ہیں۔ مجھے بتایا گیا کہ میں نے انسٹاگرام کے ذریعے ورک پلیس پالیسی کی خلاف ورزی کی ہے۔ میں کہتی ہوں کہ آپ کسی کے لباس یا پوز سے رضامند ہوں یا نہ ہوں، یہ ہر کسی کا حق ہے کہ وہ اپنی مرضی سے لباس پہنے اور جیسے چاہے اپنی تصاویر بنا کر پوسٹ کرے۔میں جم کے لباس میں اور بکنی میں کیسی دکھائی دیتی ہوں، اس بنیاد پر ادارے کے حکام نے مجھے ٹارگٹ کیا۔“