راس الخیمہ منی بس کو دل دہلا دینے والا حادثہ پیش آگیا ، 5 خواتین سمیت کتنی ہلاکتیں ہوئیں ، جانئیے

راس الخیمہ(ویب ڈیسک ) متحدہ عرب امارات کی ریاست راس الخیمہ میں ایک منی بس کو حادثہ پیش آیا ہے جس کے نتیجے میں ایک نجی کمپنی کاکارکن ہلاک ہو گیا ہے جبکہ 10 زخمی ہوئے ہیں جن میں منی بس کا ڈرائیور بھی شامل ہے۔ یہ حادثہ شیخ محمد بن زاید روڈ پر

ایگزٹ 122 پر راس الخیمہ بینک کے قریب صبح ساڑھے سات بجے پیش آیا۔ سرکاری ایمبولینس سروس کے ترجمان کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ مرنے والے کارکن کی میت اور 6 زخمی افراد کو شیخ خلیفہ سپیشیلٹی ہسپتال منتقل کر دیا گیا جبکہ باقی 4 زخمی افراد کو سقر ہسپتال بھجوا دیا گیا۔اس حادثے میں دو کارکنان شدید زخمی ہوئے ہیں، 6 کو درمیانے درجے کی چوٹیں آئی ہیں جبکہ تین معمولی زخمی ہیں۔ اس حادثے کی اطلاع ملنے کے بعد آٹھ منٹ کے اندر اندر ایمبولینسز جائے حادثہ پر پہنچ گئی۔ایک عینی شاہد نے بتایا کہ اس حادثے کا شکار ہونے والی منی بس بُری طرح پچک گئی۔ یہ حادثہ ابتدائی تحقیقات کے مطابق ڈرائیور کو اُونگھ آ جانے کے باعث پیش آیا، جس کے بعد منی بس کئی قلابازیاں کھاتی ہوئی سڑک سے دُور جا گِری اور اس میں سوار ایک کارکن موقع پر ہی ہلاک ہو گیا۔واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے ابو ظہبی میں بھی ایک ہولناک حادثے کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک ہوئے تھے جن میں پاکستانی ڈرائیور بھی شامل تھا۔ یہ حادثہ 16 جنوری 2020ء کو ال رہا بیچ روڈ کے قریب پیش آیا تھا جب پاکستانی ڈرائیور نعمت اللہ کی بس راستے میں اچانک رُک جانے والے ایک ٹرک کی پچھلی جانب لگی۔ یہ حادثہ اتنا ہولناک تھا کہ بس کا اگلا حصّہ بُری طرح پچک گیا اور اس کی ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھا نعمت اللہ اور دیگر 5نیپالی خواتین موقع پر ہی دم توڑ گئیں۔پولیس کے مطابق یہ ٹریفک حادثہ ایک کار ڈرائیور کی مجرمانہ غفلت کی وجہ سے پیش آیا، جو اچانک ایک ٹرک کو تیزی سے اوور ٹیک کر کے اس کے آگے آگیا تو ٹرک ڈرائیور کو بریک لگانا پڑی تاہم ٹرک کے پیچھے آنے والی بس اس اچانک بریک کی وجہ سے ٹرک کے پچھلے حصّے میں جا لگی۔ جس کے باعث بس میں سوار 6 افراد موقع پر ہی زندگی سے محروم ہو گئے، جبکہ 19 افراد زخمی ہوئی ہیں، جنہیں فوری طور پر ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔