اکثر لوگوں کی سالگرہ جولائی سے ستمبرکے درمیان ہوتی ہے مگر کیوں ؟ دلچسپ اور معنی خیز رپورٹ

لندن( ویب ڈیسک) امریکہ اور یورپ یا مختلف ایشیائی ملکوں میں اکثر لوگوں کی سالگرہ جولائی سے ستمبر کے درمیان ہوتی ہے۔یہ کوئی اتفاق نہیں ہے ۔ صرف امریکہ میں دسمبر میں حاملہ خواتین کی شرح میں 9 فیصد اضافہ دیکھنے میں آتا ہے اور اب سائنس نے اس حوالے سے دلچسپ انکشافات کیے ہیں۔

دنیا میں ہر مخلوق کا ارتقائی وجدان ہوتا ہے اور پیدائش کا ایک مخصوص موسم ہوتا ہے جبکہ تحقیق کے مطابق انسانوں میں بھی یہ رجحان موجود ہے۔امریکی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق تحقیق میں بتایا گیا کہ اگر حمل سرد موسم میں ٹھہرتا ہے تو بچوں کی پیدائش گرم مہینوں میں ہوتی ہے اور اس وقت وسائل زیادہ آسانی سے دستیاب ہوتے ہیں (امریکہ یا یورپ میں اکثر سرد موسم میں برفباری کی وجہ سے نقل و حمل کافی مشکل ہوتی ہے)۔ تاہم سرد مہینوں اور حمل کے درمیان کیا تعلق ہے؟ اس کا جواب تحقیق میں دیا گیا ہے اور بتایا گیا ہے کہ جب درجہ حرارت گرجاتا ہے، دن کا دورانیہ (سورج کی روشنی) کم اور رات کا دورانیہ بڑھ جاتا ہے۔ سرد مہینوں میں مردوں کے سپرم گرم موسم کے مقابلے میں زیادہ طاقتور ہوتے ہیں جبکہ دن کی روشنی کا دورانیہ کم ہونے سے خواتین کا تولیدی نظام بھی زیادہ بہتر ہوجاتا ہے۔ مذکورہ تحقیق میں موسم اور حمل ٹھہرنے کے درمیان تعلق کی جانچ پڑتال کی گئی اور یہ بات سامنے آئی کہ گرمیوں میں سپرم کا معیار کم ہوجاتا ہے جبکہ خواتین کا نظام بھی مختلف انداز سے کام کرتا ہے۔سائنس دانوں کا کہنا ہے کہ یہ کوئی حیران کن بات نہیں کہ تعطیلات کے ایام کے دوران زیادہ خواتین حاملہ ہوتی ہیں (دسبمر میں امریکہ اور یورپ میں کرسمس کی وجہ سے کافی تعطیلات ہوتی ہیں)۔ امریکہ میں 1994 سے 2014 تک بچوں کی پیدائش کے اعداد و شمار کی مدد سے ایک نقشہ تیار کیا گیا تو معلوم ہوا کہ لوگوں میں سب سے عام سالگرہ کا دن 9 ستمبر تھا جبکہ دوسرے نمبر پر 19 ستمبر تھا۔ ایک اور تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ جن بچوں کی پیدائش گرم مہینوں میں ہوتی ہے وہ اوسطاً سال کے اولین 5 مہینوں میں پیدا ہونے والے بچوں کے مقابلے زیادہ پیدائشی وزن کے مالک ہوتے ہیں، اس کے مقابلے جو خواتین گرم موسم میں حاملہ ہوتی ہیں ان میں جسمانی وزن میں اضافے کا امکان زیادہ ہوتا ہے۔