بھارتی سابق جنرل نے تمام حدیں پار کر دیں۔۔۔ کشمیری خواتین کے بارے ایسا شرمناک اعلان کر دیا کہ انسانیت بھی منہ چھپانے پر مجبور ہوگئی

نئی دہلی (ویب دیسک) بھارتی فوج کےسابق جنرل نے کھلے عام کشمیری خواتین سےدرندگی کی حمایت کردی۔صدر مملکت ممنون حسین نے سابق بھارتی جنرل کے بیان کو شرمناک قرار دے دیا۔ غیر ملکی میڈیاکےمطابق بھارتی ٹی وی شومیں بحث کے دوران انتہا پسندسوچ رکھنے والے بھارتی فوج کےسابق جنرل ایس پی سنہا نے انسانیت بھی بھلا دی۔

تفصیلات کے مطابق ڈبیٹ پینل میں شامل سابق جنرل ایس پی سنہاجذبات پر قابو نہ رکھ سکےاورخواتین کی موجودگی میں چیخ چیخ کرکشمیری خواتین سےدرندگی کی حمایت کرتےرہے۔ وہاں موجود شرکاء نے بھی سابق بھارتی جنرل کی اس شرمناک باتوں پر سخت ردعمل کا اظہارکرتےہوئےان کی شدید مخالفت اور مذمت کی۔ پروگرام کی اینکر اور پینل میں شامل دیگر ارکان نے ایس پی سنہا کو آڑے ہاتھوں لیا اور اپنے غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس طرح کے انسانیت سوز باتیں کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے مذکورہ پروگرام کی ویڈیو منسلک کرکے ٹوئٹر پر لکھا کہ بھارتی جنرل کاکشمیری خواتین کی عصمت دری کابیان شرمناک ہے، سابق بھارتی جنرل ایس پی سنہابی جےپی کاکارکن ہے۔ دوسری جانب سوشل میڈیاپرسابق بھارتی جنرل کےبیان کی دنیا بھر میں شدیدمذمت کی جارہی ہے اور لوگ اپنے غصے اور ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ایس پی سنہا کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کررہے ہیں۔ سوشل میڈیا صارفین کا کہنا ہے کہ خواتین سے متعلق اس طرح کے گھناؤنے عمل کی ترغیب دینے والے شخص پر مکمل پابندی عائد کی جانی چاہیے۔ ایک صارف نےکہاکہ کاش انہیں ڈیبیٹ کےدوران پروگرام سے باہرپھینک دیناچاہئےتھا، پروگرام کی میزبان سمیت دیگرخواتین کو پروگرام کے دوران احتجاجاً واک آوٹ کردیناچاہیئے۔ واضح رہےکہ بھارت کی جانب سےیہ پہلا واقعہ یابیان نہیں ہےاس سے قبل جولائی میں بی جے پی کی خواتین ونگ کی سربراہ کوعہدے سے ہٹادیا تھا،جب انہوں نے’’ ہندو بھائیوں ‘‘کوسڑکوں پر کھلے عام اجتماعی ریپ پراکسایا تھا۔