ایف اے ٹی ایف نے اہم ترین ملک کا نام گرے لسٹ سے نکال دیا

کولمبو(ویب ڈیسک) فائنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے گرے لسٹ سے سری لنکا کا نام خارج کر دیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سری لنکن حکومت کی جانب سے دہشت گردی سے متعلق مالی وسائل کی فراہمی کو روکنے کے اقدامات کے پیش نظر ایف اے ٹی ایف نے ان کا نام گرے لسٹ کی فہرست سے نکال دیا

ہے۔یاد رہے دو سال قبل اکتوبر 2017 میں ایف اے ٹی ایف کے اجلاس میں سری لنکا کو گرے لسٹ میں شامل کر کے اسے منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کو مالی معاونت سے متعلق اقدامات اٹھانے کا کہا گیا تھا۔واضح رہے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے پیرسے میں ہونے والے اجلاس میں پاکستان کو بلیک لسٹ میں ڈالنے کی بجائے فی الحال گرے لسٹ میں ہی رکھنے کا فیصلہ کیا تھا۔ایف اے ٹی ایف کے صدر نے مختصر پریس کانفرنس کے دوران پاکستان کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات کی تعریف کی۔صدر نے کہا پاکستان میں نئی حکومت نے دہشت گردوں کی مالی معاونت اور منی لانڈرنگ روکنے کے لیے اچھے اقدامات کیے ہیں۔پاکستان کی کارکردگی دوبارہ جانچنے کے لیے ایف اے ٹی ایف کا اگلا اجلاس فروری 2020 میں پیرس میں ہوگا۔برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق اگلے سال فروری تک پاکستان کی جانب سے کیے جانے والے اقدامات پر کڑی نظر رکھی جائے گی جس کے بعد ایف اے ٹی ایف تعین کرے گا اِسے کس فہرست میں جگہ دی جائے۔ اس اجلاس کے بعد ایف اے ٹی ایف کے ایشیا پیسیفک گروپ کی تحقیقات کے مطابق پاکستان نے اس حوالے سے مناسب اقدامات نہیں کئے اور ایف اے ٹی ایف کے رکن ملک امریکہ اور جرمنی سمیت امریکہ کے یورپی اتحادیوں نے پاکستان کے خلاف ایکشن لینے کا فیصلہ کیا۔ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس آن منی لانڈرنگ ایک عالمی ادارہ ہے، جو جی سیون ممالک( امریکہ، برطانیہ، کینیڈا، فرانس، اٹلی، جرمنی اور جاپان) کے ایما پر بنایا گیا ہے۔ یہ ادارہ1989ء میں قائم ہوا اور اس کے قیام کا مقصد ان ممالک پر نظر رکھنا اور ان پر اقتصادی پابندیاں عائد کرنا ہے، جو دہشت گردی کے خلاف عالمی کوششوں میں تعاون نہیں کرتے اور عالمی امن کے لئے خطرہ قرار دیئے گئے، دہشت گردوں کے ساتھ مالی تعاون کرتے ہیں۔ اس تنظیم کا صدر دفتر پیرس میں ہے اور 37 ممالک اس کے رکن ہیں۔ اس کا دائرہ کار پوری دنیا ہے، یعنی یہ تنظیم دنیا بھر میں کہیں بھی سرگرمی کرسکتی ہے۔ یورپی یونین اور مجلس تعاون برئے خلیجی عرب ممالک جیسی تنظیمیں بھی اس ادارے کے دائرہ کار میں آتی ہیں۔ ایشیا پیسیفک گروپ آن منی لانڈرنگ کریبین فنانشل ایکشن ٹاسک فورس ای ویلیو ایشن آف اینٹی منی لانڈرنگ مژر اینڈ ڈی فنانسنگ آف ٹیرر ازم، فنانشل ایکشن ٹاسک فورس آن منی لانڈرنگ ان ساؤتھ امریکہ اور مڈل ایسٹ اینڈ نارتھ افریقہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس جیسی عالمی تنظیموں کے ساتھ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی وابستگی ہے، یعنی ضرورت پڑنے پر ان تنظیموں کے تعاون سے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس معلومات اکٹھا کرتی ہے۔