مقبوضہ کشمیر میں پابندیاں نرم کرنے کا بھارتی دعویٰ جھوٹ نکلا ، بھارتی حکومت نے یہ ڈرامہ دراصل کیوں کیا ؟ جانیے

سرینگر(ویب ڈیسک) ینگ مینز لیگ کے نائب چیئرمین زاہد اشرف نے مقبوضہ کشمیر میں پابندیاں نرم کرنے کا بھارتی دعویٰ مسترد کر دیا، اور اسے کھلا جھوٹ ، حقیقت چھپانے اور دنیا کو گمراہ کرنے کی کوشش قراردیا ہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق زاہد اشرف نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ مقبوضہ علاقے

میں نہ صرف مکمل لاک ڈائون ہے بلکہ 90لاکھ معصوم کشمیریوں کو ڈیجیٹل اور مواصلاتی رابطہ سے محرم رکھا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس وحشیانہ رویہ کی وجہ سے لوگوں میں غیر ملکی قبضے کے خلاف پائے جانے والے غم وغصے اور نفرت میں مزید اضافہ ہوگیا ہے اور جب ان کا محاصرہ ختم ہو گا تو دنیا بھارت کے خلاف اس نفرت کودیکھے گی۔انہوں نے مقبوضہ علاقے میں گزشتہ 66دن سے جاری فوجی محاصرے پر عالمی برادری کی خاموشی کومجرمانہ اور افسوسناک قراردیتے ہوئے کہا کہ کیا کشمیری انسان نہیں جن کے بنیادی اور آزادی کے حقوق نہیں ہیں؟ انہوں نے خبردارکیا اگرمسلہ کشمیر کواسی طرح کھنچتے رہے تو عین ممکن ہے کہ خطے میں ایٹمی جنگ چھڑ جائے جوانسانیت کے لیے تباہ کن ثابت ہو گی ۔