اس سال دنیا کے کس شہر میں تاریخ کی سب سے زیادہ سردی پڑے گی ؟ حیران کن خبر

لندن (ویب ڈیسک) برطانیہ میں درجہ حرارت انتہائی نچلی سطح پر گر جانے ، مختلف حصوں میں شدید برف باری اور سڑکوں کی صورت حال انتہائی خراب ہو جانے کا خدشہ ہے۔ ڈیلی میرر کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ میں گزشتہ 30 سالہ تاریخ کا سرد ترین موسم متوقع ہے جب مشرقی سمت سے چلنے والی یخ ہوائوں کی

وجہ سے درجہ حرارت بہت زیادہ گر جائے گا اور بڑے پیمانے پر برف باری ہوگی۔ سائنس دانوں نے کہا ہے کہ قطبی ہوائوں کا’’ منجمد بھنور‘‘ چار ماہ سے بھی کم عرصہ میں برطانیہ کو اپنی لپیٹ میں لے لے گا جبکہ یہ صورت حال کئی ہفتوں تک جاری رہے گی۔ تحقیقی سائنس دان جو کہ شمالی بحر اوقیانوس میں موجودہ سمندری درجہ حرارت اور موسمی سسٹم کا جائزہ لے رہے تھے بتایا ہے کہ یخ سردی کی یہ لہر مڈ لینڈز کوسب سے زیادہ متاثر کرے گی۔ یونیورسٹی کالج لندن ( یو سی ایل ) میں ان کی تحقیق سے ظاہر ہوتا ہے کہ اگلے سال جنوری اور فروری میں گزشتہ سات برسوں میں سب سے زیادہ کپکپاہٹ والا درجہ حرارت اور گزشتہ تین دہائیوں میں ساتواں سرد ترین موسم ہوگا۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ جنوری۔ فروری 2020 میں وسطی انگلینڈ کا درجہ حرارت 2013 کے بعد سے سرد ترین ہوگاجبکہ یہ گزشتہ 30برسوں میں ساتواں سرد ترین موسم سرما ہوگا۔