بریکنگ نیوز: پوری دنیا میں ہلچل ۔۔۔۔ ایک نیا عالمی فوجی اتحاد بنانے کا فیصلہ ہو گیا ، یہ اتحاد کس ملک کی سربراہی میں بنے گا ؟ تازہ ترین خبر

واشنگٹن(ویب ڈیسک) صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے خلیج عمان اور یمنی پانیوں میں امریکا کو تیل سپلائی کرنے پر خلیجی ممالک سے آنے والے آئل ٹینکرز اور فوجی تنصیبات کے تحفظ کے لیے فوجی اتحاد بنانے کا اعلان کیا ہے۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا ایران اور یمن کے اطراف سمندر میں تجارتی

گزرگاہوں کی حفاظت کے لیے عالمی فوجی اتحاد قائم کرنا چاہتا ہے۔ اس حوالے سے امریکی افواج نے کئی دوست ممالک سے بات چیت بھی کی ہے اور رائے عامہ بحال کرنے کی کوششوں میں اضافہ کردیا گیا ہے۔اس حوالے سے امریکی جنرل جوزف ڈنفرڈ کا کہنا تھا کہ امریکا خلیجی خطے میں جہاز رانی کی آزادی کو یقینی بنانا چاہتا ہے جس کے لیے عالمی فوجی اتحاد کا قیام ناگزیر ہو گیا ہے جس کے لیے خدوخال مرتب کر لیے ہیں اور دوست ممالک سے مشاورت جاری ہے۔امریکی جنرل جوزف ڈنفرڈ نے مزید کہا کہ امریکا کمانڈ اینڈ کنٹرول کے عمل کے لیے بحری جہاز مہیا کرے گا جو امریکا کو تیل کی سپلائی پر مامور بحری جہازوں کے درمیان گشت کریں گے اور امریکی فوجی تنصیبات کی حفاظت کو یقینی بنائے گا۔واضح رہے کہ مشرق وسطیٰ میں امریکا کو تیل سپلائی کرنے پر مامور سعودی بحری جہازوں پر حملوں کے بعد امریکا پہلے ہی خلیج عمان میں ایک طیارے بردار بحری بیڑا تعینات کرچکا ہے اس کے علاوہ جنگی طیاروں کی دو کھیپ بھی قطر میں اپنے فوجی کیمپ میں منتقل کرچکا ہے۔ دوسری جانب خبر کے مطابق برطانوی شہزادہ چارلس نے کہا ہے کہ دورہ پاکستان کی یادیں تازہ ہیں ، دوبارہ پاکستان کے دورے کاخواہاں ہوں۔ جیونیوز کے مطابق شہزادہ چارلس نے کہا ہے کہ میری دورہ پاکستان کی یادیں تازہ ہیں ، دوبارہ پاکستان کادورہ کرنا چاہتا ہوں ۔ ان خیالات کااظہار شہزادہ چارلس نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے ساتھ ملاقات کے دوران کیا ۔ شاہ محمود قریشی کی شہزادہ چارلس سے ملاقات کینسنگٹن محل میں ہوئی ۔ اس موقع پر شہزادہ چارلس نے دورہ پاکستان کی یادیں تازہ کرتے ہوئے ، وزیر اعظم پاکستان عمران خان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا ۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہم شہزادہ ولیم اور اہلیہ کیٹ مڈلٹن کے پاکستان آمد کے منتظر ہیں۔