بھارت سے افسوسناک بریکنگ نیوز: لذیزپھل لیچی کو کھانے سے اچانک 55 بچوں کی موت ہوگئی، مگرلیچی میں کیا چیز تھی؟ جان کر آپ کے پیروں تلے زمین نکل جائے گی

ممبئی (ویب ڈیسک) بھارت میں دماغی بیماری سے دس روز کے دوران 53 بچے موت کے منہ میں چلے گئے، بیماری کا سبب ممکنہ طور پر لیچی فروٹ کو بتایا جارہا ہے۔بھارتی ریاست بہار میں لیچی فروٹ سے ہونے والی دماغی بیماری چمکی بخارکے باعث دس روز میں 53 بچے موت کے منہ میں جاچکے ہیں۔

لیچی کھانے کی وجہ سے چالیس سے زائد بچےضلع مظفر پور کے انتہائی نگہداشت وارڈ میں زیر علاج ہیں۔ماہرین کے مطابق لیچی فروٹ میں پایا جانے والا زہریلا مواد بچوں کی موت کا سبب ہو سکتا ہے۔بچوں میں ہونے والی یہ بیماری موسم گرما میں لیچی کے سیزن میں پیدا ہوتی ہے،2014 میں بھی اسی بیماری کے باعث ڈیڑھ سو افراد ہلاک ہوئے تھے۔ دوسری جانب یہ خبر ہے کہ امریکی جریدے وال اسٹریٹ جرنل نے انکشاف کیا ہے کہ شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ اُن کے پُراسرار طریقے سے قتل کیے گئے سوتیلے بھائی کم جونگ نام دراصل سی آئی اے ایجنٹ تھے۔امریکی جریدے وال اسٹریٹ جرنل نے شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ اُن کے مقتول سوتیلے بھائی کم جونگ نام کے حوالے سے انکشاف کیا ہے کہ وہ امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کے ایجنٹ تھے اور شمالی کوریا کی جاسوسی کیا کرتے تھے۔شمالی کوریا کے سربراہ کے سوتیلے بھائی کا ایک بار ملک کی باگ ڈور سنبھالنے والوں کی ممکنہ افراد فہرست میں بھی نام آچکا ہے تاہم والد کے انتقال کے بعد کم جونگ اُن نے یہ عہدہ سنبھال لیا اور یہیں سے دونوں کے درمیان اختلافات نے جنم لیا۔اسی دوران دونوں بھائیوں کے درمیان اختلافات اور اقتدار کے حصول کے لیے کھینچا تانی کی خبریں بھی آتی رہی ہیں، اسی اثناء میں اچانک 2017 کو کوالالمپور کے ہوائی اڈے پر کم جونگ اُن کے سوتیلے بھائی کا قتل ہوگیا۔ اور اب بھارت میں دماغی بیماری سے دس روز کے دوران 53 بچے موت کے منہ میں چلے گئے۔