’’9 ووٹ تو میرے گھر میں تھے، مجھے 5 ووٹ کیسے ملے؟ ‘‘ بھارتی انتخابات میں صرف پانچ ووٹ حاصل کرنے والا امیدوار میڈیا کے سامنے رو پڑا، اس کا تعلق کس سیاسی جماعت سے ہے؟

ممبئی (نیوز ڈیسک ) بھارت میں ہونے والےانتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی واضح برتری دیکھنے میں آ رہی ہے۔ اب تک موصول ہونے والے نتائج کے مطابق بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پہلے جبکہ کانگریس دوسرے نمبر پر ہے۔بھارت میں اس وقت خوب گہما گہمی دیکھی جا رہی ہے

جب کہ نریندر مودی کے گھر مبارکباد دینے کے لیے آنے والے لوگوں کا سلسلہ بھی جا ری ہے۔بھارتی انتخابات میں اداکاروں نے بھی اپنے مدمقابل امیدوراوں کو شکست دی جن میں سنی دیو،ارمیلاماٹونڈکر سمیت کئی اداکار شامل ہیں۔تاہم اگر بات کریں بھارت کے علاقے جلندر کی جہاں چوہدری سنتوک سنگھ اور نیتو شٹرا مدِ مقابل تھے۔نیتو الیکشن میں بطور آزاد امیدوار حصہ لے رہے تھے۔تاہم یہاں دلچسپ بات یہ ہے کہ وہ صرف 5ووٹ حاصل کر پائے۔ نیتو کا کہنا تھا کہ 9 ووٹ تو میرے گھر والوں کے تھے جب کہ گنتی میں مجھے صرف 5 ووٹ پڑے۔جب نیتو سے سوال کیا گیا کہ کیا آپکے گھر والوں نے بھی آپکے ساتھ بے ایمانی کی تو ان کا کہنا تھا کہ میرے ساتھ گھر والوں نے بے ایمانی نہیں کی بلکہ مشینوں میں کوئی خرابی ہو گی۔ نیتو کو انتخابی مہم چلانے کے باوجود 5 ووٹ ملے۔نیتو کا کہنا تھا کہ میں قسم کھا کر کہتا ہوں کہ مجھے لوگوں نے ووٹ دئیے تاہم میرے ساتھ زیادتی ہوئی۔میں آئندہ الیکشن نہیں لڑوں گا۔میں نے پہلے بھی مجبوری میں الیکشن لڑا تھا لیکن صرف 5 ووٹ پڑے۔نیتو کو کہنا تھا کہ جو لوگ الیکشن میں ووٹ ڈالنے گئے وہ بھی چور تھے۔بھارتی امیدوار نے دلبرداشتہ ہو کر آئندہ الیکشن نہ لڑںے کا اعلان کر دیا۔نتو نے انتخابات میں بری طرح سے شکست کا دکھ دل پر لے لیا اور صدمے کے مارے وہ میڈیا کے سامنے پھوٹ پھوٹ کر رو پڑے۔