میرٹ کے بجائے ٹاس کے ذریعے ملازمت۔۔۔ مودی سرکا ر کا حیران کن فیصلہ سامنے آ گیا

میرٹ کے بجائے ٹاس کے ذریعے ملازمت۔۔۔ مودی سرکا ر کا حیران کن فیصلہ سامنے آ گیا
نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارتی ریاست پنجاب کے وزیر تعلیم نے سکہ اُچھال کر مکینیکل پروفیسر کا انتخاب کرڈالا۔یوں تو اسکول ہو یا یونیورسٹی یار پھر کوئی انسٹیٹیوٹ کسی بھی تعلیمی ادارے میں استاد کا انتخاب ہمیشہ قابلیت اور میرٹ پر کیا جاتا ہے تاہم بھارت کا ایک اور منفی پہلو اُس وقت سامنے آیا،

یہ بھی پڑھیں:عمران خان کو الیکشن سے پہلے نا اہل کروانے کا پلان کامیاب ہونے کے قریب، (ن) لیگ اب کونسا کارڈ کھیلنے والی ہے ؟حامد میر کی ایسی پیش گوئی جس پر وقت نے سچائی کی مہر ثبت کر دی
جب استاد کا انتخاب میرٹ یا قابلیت کے بجائے قسمت پر کیا گیا۔بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی ریاست پنجاب کے وزیر فنی تعلیم چرنجیت سنگھ چھنی نے دو امیدواروں کے درمیان اُنکی قابلیت کی بنا پر فیصلہ کرنے کی بجائے سکہ اُچھال کر مکینیکل پروفیسر کے طور پر انتخاب کیا۔بھارتی وزیر نے پٹیالہ کے کالج میں تقرری کے لیے 2 اساتذہ میں سے ایک کی تقرری کا فیصلہ ٹاس کرکے کیا جب کہ ان کے اس عمل نے نہ صرف بھارت کے پڑھے لکھے ہونے کے جھوٹے قول کا پول کھول دیا بلکہ وزراء کی نااہلی بھی ثابت کردی ہے۔واقعے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہوچکی ہے اور بھارت میں تعلیمی معیار پر ایک بار پھر کئی سوالات اُٹھ گئے ہیں۔بھارتیہ جنتا پارٹی نے بھی کانگریس کے ریاستی وزیر کے عمل کی سخت مذمت کی ہے اور فی الفور برطرفی کا مطالبہ کیا ہے۔
یہ بھی پڑھیں: وزیر اعلیٰ پنجاب کی سپریم کورٹ پیشی کے موقع پر کمرہ عدالت میں کیا کچھ ہوتا رہا ؟معتبر صحافی نے اصل کہانی بیان کر دی
یہ بھی پڑھیں:بڑی خبر :ڈاکٹر عامر لیاقت سپریم کورٹ میں پیش ،اُنہیں کِس کیس میں طلب کیا گیا؟ جانیے
یہ بھی پڑھیں:الحمد للہ ۔۔۔ہم نکالتے رہیں گے ۔۔۔ہمیں کوئی نہیں نکال سکتا ۔۔۔جسٹس ثاقب نثار کا دبنگ بیان