بحری قزاقوں کی ایک آنکھ پر پٹی کیوں ہوتی ہے ؟ ایک انتہائی دلچسپ و معلوماتی رپورٹ ملاحظہ کیجیے

لاہور (ویب ڈیسک) بحری قزاق آنکھ پر پٹی کیوں؟ بحری قزاق کی آنکھ پر بندھی ہوئی پٹی تاریخی فلموں میں عام دکھائی دیتی ہے۔ اس کے بارے ایک مقبول نظریہ بھی موجود ہے کہ بحری سفر کرنے والوں میں آنکھ پر پٹی باندھنا ایک عام سی بات تھی، اس کی وجہ سے

ان کی ایک آنکھ مسلسل اندھیرے سے شناسا ہوجاتی تھی ۔ یہ اس وقت کام آتی تھی جب کسی کو عرشے کے نیچے جاکر اندھیرے میں دیکھنا ہوتا اس کی وجہ سے وہ فوری طور پر اندھیرے میں دیکھ سکتے تھے۔ عام طور پر اندھیرے میں دیکھنے کے لئے آنکھ کو مطابقت اختیار کرنے میں کچھ وقت لگتا ہے۔ یہ بات قابل قبول اس لئے لگتی ہے کیونکہ عام طور پر آنکھ کو اندھیرے میں دیکھنے کے لئے مکمل طور پر کئی منٹ لگتے ہیں- لیکن یہ چیز لڑائی میں زیادہ مفید نہیں ہوتی! فصلوں کو بدل بدل کر لگانے میں کیا فائدہ ہوتا ہے؟ فصلوں کو وقفے وقفے سے لگانے میں کچھ مخصوص پودوں میں بیماریاں اور کیڑے لگنے کا امکان کم ہوجاتا ہے۔ اس کے علاوہ زرخیزی بھی بہتر ہوتی ہے۔ ایک اصول ہے کہ کسان اور مالی ایک ہی فصل یا پودے کو ایک ہی جگہ پر بار بار نہیں اگاتے۔ مثال کے طور پر ٹماٹر، آلو اور مرچیں بار بار ایک جگہ پر اگانا منا سب نہیں۔ کچھ بیماریاں ہیں (جیسا کہ پھپھوندی، وائرسز اور مرجھا دینے والی بیماری) اور کچھ کیڑے (جیسا کہ بھونرا اور لاروا) جو ان کو ہدف بناتے ہیں اور یہ سرما میںمٹی میں زندہ رہتے ہیں۔

یہی وجہ ہے کہ کسان ان کے پودوں کو ایک سال کے بعد دوسرے سال اسی جگہ پر نہیں اگاتے۔ مختلف فصلوں کو پھلنے پھولنے کے لئے مختلف مٹی درکار ہوتی ہے۔ وائرس اوربیکٹیریا میں کیا فرق ہے؟ وائرس اور بیکٹیریا دونوں بیماریوں کا سبب بن سکتے ہیں، تاہم جب ان کی ساخت، نسل بڑھانے یا کسی بھی دوسری چیز کی بات آتی ہے تو یہ ایک دوسرے سے بالکل ہی الگ ہوتے ہیں۔ بیکٹیریا صرف ایک بنیادی خلیہ کو بنانے والا ڈی این اے، خلیوں کی دیواروں، رائبوسومز اور سائٹوپلازم سے بنتے ہیں۔ وائرس ان کے مقابلے میں چھوٹے ہوتے ہیں۔ یہ صرف پروٹین میں ملفوف جینیاتی معلومات (ڈی این اے یا آر این اے) کی لڑیاں ہوتے ہیں۔ اس طرح سے وائرس کو زندہ نہیں سمجھا جاتا۔ جراثیم لاجنسی طور پر اپنی نسل بڑھاتے ہیں اور دو ایک جیسے خلیات میں تقسیم ہوجاتے ہیں۔ وائرسز اپنے میزبان کے خلیہ میں داخل ہوکر بڑھتے ہیں اور ان کو مجبور کرتے ہیں کہ وہ وائرسز کی نقول بنائیں۔ وائرس سے ہونے والی بیماریوں کا علاج کرنا مشکل ہوتا ہے کیونکہ وائرس مریض کے خلیہ کے اندر ہوتے ہیں، جبکہ بیکٹیریا سے ہونے والی بیماریوں کا عام طور پر اینٹی بائیوٹکس سے علاج کیا جاتا ہے۔(ش س م) (بشکریہ روزنامہ دنیا )