وہ پرفیوم اور خوشبوئیں جو مچھروں کو آپ سے دور بھگا سکتی ہیں

لاہور (ویب ڈسیک ) کیا آپ کو معلوم ہے کہ مچھر دنیا کا سب سے خطرناک جاندار ہے ؟ اور یہ دعویٰ عالمی ادارہ صحت کا ہے۔ جس کی وجہ یہ ہے کہ مچھروں کی بدولت ملیریا، ڈینگی اور دیگر امراض پھیلتے ہیں جن کے نتیجے میں ہر سال لاکھوں اموات ہوتی ہیں۔موسم گرما

کو مچھروں کا سیزن میں قرار دیا جاتا ہے مگر اچھی بات یہ ہے کہ آپ ان کیڑوں کو آسانی سے خود سے دور رکھ سکتے ہیں۔ جی ہاں چند چیزوں سے مچھروں کو خود سے دور رکھنا ممکن ہوتا ہے۔لہسن کی بو مچھروں کو ہمیشہ دور رکھنے میں مدد دیتی ہے۔ درحقیقت اس کے لیے لہسن ہاتھ یا جیب میں رکھنے کی بھی ضرورت نہیں۔ اس کے چند ٹکڑے کھالینے بھی خون چوسنے والے ان کیڑوں کو آپ سے دور رکھنے کے لیے کافی ہیں۔اس کے علاوہ تلسی کا پودا اگانا بہت آسان ہوتا ہے اور یہ مچھروں کو گھر سے دور بھی رکھتا ہے۔ ماہرین کے مطابق اس پودے کو گھر میں لگانا مچھروں کو دور رکھنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے جس کی وجہ اس کی تیز مہک ہے۔ پودینے کے پتوں کی مہک مچھروں کے لیے قابل برداشت نہیں ہوتی اور اس کے تیل کے چند قطرے استعمال کرکے آپ مچھروں کو خود سے ہمیشہ دور رکھ سکتے ہیں۔ جی ہاں لیمن گراس کی مہک بھی مچھروں کو دور رکھتی ہے اور اس کا تیل اس مقصد کے لیے دنیا بھر میں استعمال کیا جاتا ہے۔نیم کا تیل مچھروں سے بچانے کا آسان ترین ذریعہ ہے، بس اس تیل کو لباس سے باہر حصے پر لگالیں اور بس، مچھر آپ سے دور رہیں گے۔ خیال رہے موسم گرما کو مچھروں کا سیزن میں قرار دیا جاتا ہے مگر اچھی بات یہ ہے کہ آپ ان ان چیزوں کو استعمال کر کے مچھروں کو آسانی سے خود سے دور رکھ سکتے ہیں۔