لاہور سے افسوسناک خبر : بچے سے زیادتی کے الزام میں تھانے کی حوالات میں بند ملزم کی شرمندگی سے خود کشی ، اصل کہانی کیا ہے ؟ جانیے

لاہور(ویب ڈیسک)تھانہ اکبری گیٹ میں بچے سے بد اخلاقی کے الزام میں گرفتا ر ملزم نے مبینہ طو رپر لاک اپ سے ملحقہ باتھ رو م میں گلے میں پھندا لے کر زندگی کاخاتمہ کر لیا، اہل خانہ نے پولیس اسٹیشن کے باہر شدید احتجاج کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ ذیشان کی موت

مدعی پارٹی اور پولیس تشدد کی وجہ سے ہوئی،لواحقین کی جانب سے ایک نوجوان پر پولیس کو مخبری کے شبہ میں تشدد بھی کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق اکبری گیٹ پولیس اسٹیشن کے اہلکاروں نے ذیشان کو رمضان نامی بچے سے مبینہ بد اخلاقی کے الزا م میں گزشتہ رات گرفتار کیا تھا۔ اہل خانہ کے مطابق صبح دس بجے انہیں اطلاع دی گئی کہ ذیشان نے لاک اپ سے ملحقہ باتھ روم میں گلے میں پھندا لے کر خود کشی کر لی ہے۔ دوسری جانب اہل خانہ اور عزیز و اقارب تھانے کے باہر جمع ہو کر احتجاج کیا اور الزا م عائد کیا کہ پہلے مدعی پارٹی نے ذیشان کو تشدد کا نشانہ بنایا اس کے بعد پولیس کی جانب سے بھی اس پر تشدد کیا گیا جس سے اس کی موت واقع ہوئی۔اطلاع ملنے پر فرانزک ماہرین بھی موقع پر پہنچ گئے جنہوں نے موقع سے شواہد اکٹھے کرلئے جس کے بعدلاش کو پوسٹمارٹم کے لئے مردہ خانے منتقل کر دیا گیا۔ ڈی آئی جی آپریشنز نے بھی پولیس اسٹیشن کا دورہ کیا جبکہ ایس ایس پی کو انکوائری کا حکم دیدیا گیا۔