You are here
Home > منتخب کالم > ہارون الرشید

پاکستان تو میں ضرور آؤنگا ۔۔۔۔!!! جن دنوں میں دنیا نیلسن منڈیلا سے ملاقات کے لیے ترستی تھی ، ان دنوں نیلسن منڈیلا پاکستان آنے کے لیے کیوں بے قرار تھے ؟ ہارون الرشید کی خوبصورت تحریر

لاہور (ویب ڈیسک) نامور کالم نگار ہارون الرشید اپنے ایک کالم میں لکھتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔جنوبی افریقہ میں پاکستانی سفیر کو نیلسن منڈیلا سے ملاقات کرنا تھی۔ ان کے دفتر نے کہا: مشکل ہے، بہت مشکل۔ آخر کو پیغام ملا کہ ناشتے سے پہلے آجائیے۔ دنیا بھر سے مقبول ترین

وہ نامور اور مشہور زمانہ شخصیت جسکے رحیم یار خان میں محلات کی مالیت 50 ارب ڈالر کے لگ بھگ ہے ، یہ کون ہیں؟ ہارون الرشید کے کالم میں دنگ کر ڈالنے والا انکشاف

لاہور (ویب ڈیسک) قانون کی پاسداری اور فروغِ علم کے سوا،مغرب کی بالاتری اسی میں ہے۔ امن اور سیاسی استحکام ہی سے معیشت فروغ پاتی اور صلاحیت نکھر کر معجزے رونما کرتی ہے۔ مغرب تو الگ کہ صدیوں کا تجربہ ہے۔ دبئی، دنیا کا دوسرا بڑا تجارتی مرکز کیسے بنا؟

سب ایک تھالی کے چٹے بٹے ، اویس نورانی نے تو جو کہا سو کہا۔۔۔۔ برسوں پہلے مولانا فضل الرحمان نے بھارت میں کھڑے ہو کر کیا کچھ کہا تھا ؟ ہارون الرشید کے انکشافات ، جمہوریت کے دعویداروں کے پول کھل گئے

لاہور (ویب ڈیسک) ریاستِ مدینہ کی وزیرِ اعظم محترم بات کرتے ہیں، کیا انہیں ادراک ہے کہ ریاستِ مدینہ تھی کیا؟ اس کے مکینوں کا کردار اوراندازِ فکر کیا تھا؟ رات ڈھلنے لگی تو حضرت مولانا اویس نورانی کو تردید کا خیال آیا۔ان کے مطابق یہ بات کہ بلوچستان کو

شہزاداکبر نے جمائما خان پر ایسی کیا مہربانی کی تھی جسکے بدلے میں انہیں معاون خصوصی برائے احتساب بنا دیا گیا ۔۔۔۔ ہارون الرشید نے حیران کن انکشاف کرکے کپتان کے مستقبل کی پیشگوئی بھی کردی

لاہور (ویب ڈیسک) کپتان کا سنہری دور ختم ہو چکا۔ وہ دن ہوا ہوئے کہ پسینہ گلاب تھا۔ اب ان کے لیے بہت تھوڑی سی مہلت باقی ہے کہ موزوں حکمتِ عملی کا تعین کر لیں یا پھسل کر گر پڑیں۔زمانہ کسی پہ مہرباں یا نا مہرباں نہیں ہوتا۔ ہر

عمران خان کی برکات : پاکستان کے آدھے سے زیادہ سرمایہ کاروں نے اپنی رقوم بنکوں سے نکلوا کر گھروں میں رکھ لیں ۔۔۔ آگے کیا حالات آنے والے ہیں ؟ ہارون الرشید نے تبدیلی والوں کے پلے کچھ نہ چھوڑا

لاہور (ویب ڈیسک) ڈاکٹر رضوان کی مدد سے ایک ٹی وی چینل پر ایک مختصر سی رپورٹ اس موضوع پر نشر کی گئی۔ دو تین دن ہی گزرے تھے کہ انہوں نے مجھے لکھا: زرعی تحقیقاتی مرکز پشاور میں ایک افسر نے بتایا دو دن قبل پختون خواہ

Top