اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے دھماکہ خیز اعلان کر دیا

لاہور (ویب ڈیسک) اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے نئی زری پالیسی کا اعلان آج ( منگل کو ) کیا جائے گا۔ترجمان اسٹیٹ بینک کے مطابق زری پالیسی کمیٹی کے اجلاس کے بعد نئی زری پالیسی سے متعلق تفصیلات پریس ریلیز کے ذریعے جاری کی جائیں گی۔ ماہرین کے مطابق پالیسی ریٹ میں

کمی کا اعلان متوقع ہے۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق مشیر خزانہ حفیظ شیخ کی زیرصدارت اجلاس میں قومی اقتصادی کونسل(ایکنک )نے 100ارب روپے سےز ائد کے6میگا منصوبوں کی منظوری دے دی ہے ، منصوبوں میں ونڈر ڈیم ، کچھی کینال ،پاکستان ریزز ریونیو پروجیکٹ، گردوارہ کرتارپور صاحب راہداری ڈویلپمنٹ ودیگر 2شامل ہیں، بلوچستان کے ضلع لسبیلہ میں دریائے ونڈر پر ونڈر ڈیم پروجیکٹ کی منظوری دی گئی ، منصوبہ پر 15ارب 23کروڑ روپے لاگت آئے گی اور یہ چار سال کے عرصہ میں مکمل کئے جانے کا امکان ہے، ڈیرہ بگٹی میں 22ارب 92کروڑروپے کی لاگت سے کچھی کینال (بقایا کام فیز ون) کی منظوری دی گئی، منصوبہ کی تکنیکی موزونیت کا کام نیسپاک کرے گا،منصوبہ تین سال کی مدت میں مکمل کیا جائے گا، پاکستان ریزز ریونیو پروجیکٹ بشمول آئی پی ایف (برائے ایف بی آر ہیڈ کوارٹرز)کی منظوری دی گئی ، منصوبہ پر 12ارب 48کروڑ روپے کی لاگت آئے گی،منصوبہ کا مقصد پائیدار بنیادوں پر محصولات میں وسعت لانا اور اسے جدید خطوط پر استوار کرنا ہے، یہ منصوبہ عالمی بینک کے تعاون سے آئی ڈی اے کے 40کروڑ ڈالر نرم شرائط پر قرضہ کا حصہ ہے،منصوبہ کے تحت ایف بی آر ہیڈ کوارٹرز، ذیلی دفاتر اور کسٹمز کنٹرول پوسٹس کے درمیان جدید ٹیکنالوجی پر مبنی رابطوں کو استوار کیا جائے گا،، مشیر خزانہ نے ایکنک کے آئندہ اجلاس میں ایف بی آر کو اس پروجیکٹ اور منصوبہ کیلئے فنڈز کے موثر استعمال پر تفصیلی بریفنگ دینے کی ہدایت کی،پنجاب کے ضلع نارووال میں گردوارہ کرتارپور صاحب راہداری کی ڈویلپمنٹ سے متعلق منصوبہ کی منظوری دی گئی ،منصوبہ کی لاگت 16ارب 54کروڑ روپے ہے، لاہور واٹر اینڈ ویسٹ واٹر مینجمنٹ پروجیکٹ کی بھی منظوری دی گئی، منصوبہ پر 14ارب 43کروڑ روپے کی لاگت آئے گی، منصوبہ کیلئے 25کروڑ 60لاکھ ڈالر ایشیائی ترقیاتی بینک قرضہ فراہم کرے گا۔