بریکنگ نیوز: پی ٹی آئی بمقابلہ پی پی پی ۔۔۔۔۔پی ایس 86 دادو کے ضمنی الیکشن کا پہلا غیر سرکاری نتیجہ آگیا

دادو (ویب ڈیسک) سندھ کے ضلع دادو کی تحصیل جوہی میں آج ہونیوالے ضمنی الیکشن میں ووٹنگ کا وقت ختم ہو گیا ہے اور گنتی کا وقت جاری ہے ۔ پولنگ صبح 8 بجے سے شام 5 بجے تک جاری رہی ۔ پیپلز پارٹی کے غلام شاہ جیلانی کے انتقال کے باعث خالی ہونے والی

سندھ اسمبلی کی نشست پی ایس 86 دادو 4 پر ہونے والے ضمنی انتخاب میں پیپلز پارٹی، تحریک انصاف اور 4 آزاد امیدوار حصہ لے رہے ہیں۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق دادو پی ایس 86 کے 2 حلقوں کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ آگیا ہے جس کے مطابق تحریک انصاف کے امیدوار امداد لغاری 464 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں ۔ جبکہ پی پی امیدوار دوسرے نمبر پر ہیں ۔ پیپلز پارٹی نے مرحوم ایم پی اے غلام شاہ جیلانی کے بیٹے پیر صالح شاہ جیلانی کو ٹکٹ دیا ہے، صالح شاہ جیلانی اور تحریک انصاف کے امداد حسین لغاری کے درمیان کانٹے کا مقابلہ متوقع ہے۔ سندھ اسمبلی کی نشست پی ایس 86 دادو 4 جوہی کے 158 پولنگ اسٹیشنوں پر پولنگ کا عمل صبح 8 بجے شروع ہوا جس کی تمام تیاریاں گزشتہ روز ہی مکمل کرلی گئی تھیں۔ الیکشن کا سامان اور عملہ پاک فوج اور رینجرز کی نگرانی میں پولنگ اسٹیشنوں پر پہنچا دیا گیا تھا، پولنگ کے دوران فوج اور رینجرز کے 1100 جوان اور پولیس کے 1300 اہل کار ڈیوٹی انجام دے رہے ہیں جو پولنگ اسٹیشنز کے اندر اور باہر تعینات ہیں۔ ایس ایس پی دادو فرح رضا ملک کے مطابق حلقے میں 158 پولنگ اسٹیشنز میں سے 10 انتہائی حساس اور 62 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ ضمنی انتخاب کے سلسلے میں آج ضلع بھر میں عام تعطیل کی گئی ہے۔