بریکنگ نیوز: ترکی کے 2 ایف 16 طیاروں کی دبنگ کارروائی ۔۔۔۔ کس ملک کے طیارے کو نشانہ بنا دیا ؟ تازہ ترین خبر

انقرہ (ویب ڈیسک ) ترکی نے اپنی فضائی حدود کی خلاف ورزی کرنے والے نامعلوم ڈرون کو شامی سرحد پر مار گرایا ہے ۔ غیرملکی خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق ترکی وزارت دفاع نے بتایا کہ نامعلوم ڈرون نے 6 مرتبہ ترکی کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی تھی۔اس ضمن میں

مزید بتایا گیا کہ ہمارے دو ایف 16 جنگی طیاروں نے انسیرلیک ایئر بیس سے پرواز بھری اور ڈرون کو مار گرایا۔ وزارت دفاع کی جانب سے بتایا گیا کہ ڈرون کی ملکیت کے بارے میں کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہے اور ڈرون کو مقامی وقت کے مطابق دوپہر ڈیڑھ بجے نشانہ بنایا گیا۔انہوں نے بتایا کہ شامی سرحد کے نزدیک ترک صوبے کیلس میں مار گرائے ڈرون کا ملبہ ملا۔واضح رہے کہ نومبر 2015 میں ترکی نے فضائی حدود کی خلاف ورزی پر شامی سرحد کے قریب روس کا ایک جنگی طیارہ مار گرایا تھا۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق ترکی کے صدر رجب طیب اردوان نے کہا ہے کہ ہم نے جس طرح اپنے مسلح و غیر مسلح ڈرون اور سیٹلائٹ بنائے ہیں اسی طرح انشاء اللہ اپنا جنگی طیارہ بھی تیار کریں گے۔ ہم ہر شعبے میں قومی و مقامی امکانات کو بلند ترین سطح پر لانے کا عزم رکھتے ہیں۔ استنبول شپ یارڈ میں منعقدہ تقریب سے خطاب میں صدر اردوان نے کہا کہ حالیہ دنوں میں دنیا اور بحر اسود میں درپیش حالات ہمیں دیگر تمام شعبوں کی طرح سمندر میں بھی زیادہ مضبوط ہونے کا اشارہ دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت ترکی اس وقت جنگی بحری جہازوں کی مقامی سطح پر ڈیزائن کرکے تیار کرنے والے 10 ممالک میں شامل ہے۔صدر اردوان نے کہا کہ ہم بحری جہاز کی مشینری سے لے کر بحری توپوں، میزائلوں، تارپیڈو اور الیکٹرانک سسٹمز تک ہر شعبے میں مہارت حاصل کرنے کا بھرپور عزم رکھتے ہیں۔ حالیہ دنوں میں ترکی نے دفاعی صنعت میں جو ترقی کی ہے اس کے طفیل ہم زیادہ اعتماد کے ساتھمستقبل کی طرف بڑھ رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایف۔35 طیاروں کے منصوبے میں جو حالات ہمیں پیش آئے انہوں نے ہمارے عزم کو مزید پختہ کیا ۔