بریکنگ نیوز: آرمی چیف قمر جاوید باجوہ سے ایسی بڑی شخصیت کی ملاقات کہ آپ حیران رہ جائیں گے

راولپنڈی(ویب ڈیسک )چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمرجاوید باجوہ سے ترکمانستان کے سفیر نے ملاقات کی ہے جس میں باہمی دلچسپی ،دفاعی تعاون اور سیکیورٹی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور سمیت دفاعی تعاون پر

بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔اس دوران علاقائی رابطوں کے منصوبوں سے متعلق سیکیورٹی امور پر بھی بات چیت ہوئی ۔ملاقات میں ترکمانستان ،افغانستان ،پاکستان اور بھارت پائپ لائن کے امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی یکطرفہ اقدامات عالمی قوانین ،اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی قراردادوں کی صریحاً خلاف ورزی ہیں،بھارت پورے جنوبی ایشیاء کا امن خطرے میں ڈالنا چاہتا ہے، دنیا بھر میں مقیم پاکستانی و کشمیری تارکین وطن کو مقبوضہ جموں و کشمیر کے نہتے مسلمانوں کو بھارتی بربریت سے نجات دلانے کیلئے آواز بلند کرنا ہو گی ۔ منگل کو برطانیہ کے 5 رکنی پارلیمانی وفد نے ایم پی خالد محمود کی سربراہی میں وزارتِ خارجہ میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی ۔ ملاقات کے دوران مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا ۔ وزیر خارجہ نے برطانوی پارلیمانی وفد کو مقبوضہ جموں و کشمیر کی تشویشناک صورتحال سے آگاہ کیا۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہندوستان کی جانب سے مقبوضہ جموں و کشمیر میں اٹھائے گئے یکطرفہ اقدامات بین الاقوامی قوانین اور اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی قراردادوں کی صریحاً خلاف ورزی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں گذشتہ تین ہفتوں سے مسلسل کرفیو نافذ ہے ذرائع مواصلات پر پابندی عائد کر کے لاکھوں کشمیریوں کا رابطہ دنیا بھر سے منقطع کر دیا گیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی میڈیا اور انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں کی طرف سامنے آنے والی رپورٹس انتہائی المناک ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت اپنے یکطرفہ اقدامات سے پورے جنوبی ایشیا کا امن خطرے میں ڈالنا چاہتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ رات کی تاریکی میں گھروں پر ریڈ کرکے نوجوان اور بچوں کو جبراً اغواء کیا جا رہا ہے خواتین کی عصمت دری کی جا رہی ہے نہتے کشمیریوں کو جبر و تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں مسلسل کرفیو کی وجہ سے خوراک اور ادویات کی شدید قلت کی اطلاعات ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ سیکورٹی کونسل کے اجلاس سے واضح ہو چکا ہے کہ یہ بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ متنازع مسئلہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہم بین الاقوامی برادری کو مطلع کر چکے ہیں کہ بھارت مقبوضہ جموں و کشمیر سے توجہ ہٹانے کے لیے پلوامہ کی طرز پر “فالس فلیگ آپریشن “یا کوئی اور ناٹک کر سکتا ہے ۔ وزیر خارجہ نے وفد کے ممبران کو بتایا کہ پاکستان مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کو بھارتی استبداد سے نجات دلانے، اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد کروانے اور مظلوم کشمیریوں کی حق خودارادیت کی جدوجہد کی معاونت کے لیے ہر فورم پر آواز بلند کرتا رہے گا۔وزیر خارجہ نے مسئلہ کشمیر کو بین الاقوامی سطح پر اجاگر کرنے اور مظلوم کشمیریوں کے حق میں آواز اٹھانے پر برطانوی اور یورپی پارلیمنٹرینز کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ دنیا بھر میں مقیم پاکستانی اور کشمیری تارکین وطن کو مقبوضہ جموں و کشمیر کے نہتے مسلمانوں کو بھارتی بربریت سے نجات دلانے کیلئے آواز بلند کرنا ہو گی ۔ برطانوی پارلیمانی وفد کے شرکاء نے مقبوضہ جموں و کشمیر کی صورتحال پر انتہائی تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ انسانی حقوق کی ان خلاف ورزیوں پر دل گرفتہ ہیںبرطانوی پارلیمانی وفد کے شرکاء نے کہا کہ وہ برطانوی پارلیمنٹ میں مقبوضہ جموں و کشمیر کے حوالے بہت جلد مباحثے کا انعقاد کرنے جا رہے ہیں۔