بریکنگ نیوز: شریفوں اور زر والوں کی گردن کا سریا نکالنے کے لیے جج شاہ رخ ارجمند میدان میں آگئے ، بڑے کام کی خبر

اسلام آ با د (ویب ڈیسک)انسداد دہشتگردی کے عدالت کے جج شہاہ رخ ارجمند کو احتساب عدالت کا چارج دے دیا گیا،جج شارخ ارجمند 15 اگست سے بطور ڈیوٹی جج احتساب عدالت سماعت کرینگے۔ تفصیلات کے مطا بق جج شارخ ارجمند کو جج محمد بشیر کے رخصت پر ہونے کے باعث چارج دیا گیا،جج محمد بشیر کی

چھٹیوں سے واپسی تک جج شارخ ارجمند نیب کیسز پر سماعت کرینگے ۔جج شارخ ارجمند کو احتساب عدالت کا چارج دے دیا گیا۔ وزارت قانون کے نوٹیفیکشین پر 15 اگست سے عمل درآمد ہوگا۔ جج شارخ ارجمند نے 2017 میں پی ۔ٹی۔وی حملہ کیس کی سماعت بھی کی تھی ۔ پی-ٹی-وی حملہ کیس کی حالیہ سماعت میں انسداد دہشتگردی عدالت نے پی ٹی وی اور پارلیمنٹ حملہ کیس میں شاہ محمود قریشی، جہانگیر ترین اور پرویز خٹک کی حاضری سے استثناء کی درخواست منظور کرلی تھی۔ دوسری جانب جج محمد بشیر وہ ہی احتساب عدالت کے جج ہیں جنھوں نے سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے خلاف العزیزیہ فلیگ شپ ریفرینس کیس کی سماعت کی تھی اور گزشتہ برس انکے خلاف فیصلہ دیا تھا۔جج محمد بشیر نے احتساب عدالت کے جج ہونے کی حیثیت سے کئی اہم کیسز نمٹائے۔ گزشتہ برس ہی انھوں نے نواز شریف کیخلاف ایون فیلڈ ریفرینس کی سماعت بھی کی تھی۔ واضح رہنا چاہیے کہ جج محمد بشیر نے اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثے بنانے پر ان پر فرد جرم عائد کیا تھا۔ اپنے فرائض سر انجام دیتے ہوئے جج محمد بشیر نے سابق صدر آصف علی زرداری کے منی لانڈرنگ کیسز کی سماعت بھی کی۔ اسکے علاوہ جج محمد بشیر کی احتساب عدالت میں سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کے خلاف قطر ایل- این – جی کیس بھی زیر غور ہے۔ جج محمد بشیر کی چھٹیوں سے واپسی پر جج شارخ ارجمند سے اضافی چارج واپس لے لیا جائےگا اور وہ انسداد دہشتگردی کی عدالت میں اپنے فرائض سر انجام دیں گے۔