بریکنگ نیوز: مریم نواز کی احتساب عدالت میں پیشی ، پولیس اور (ن) لیگی کارکنوں میں تصادم ، عمران خان کو بے غیرت کہنے والی عظمی بخاری کے حوالے سے افسوسناک اطلاعات

لاہور ( ویب ڈیسک ) جمعہ کا دن مسلم لیگ (ن) اور اسکے کارکنان پر ہمیشہ سے ہی بھاری رہا ہے۔ آج لاہور کی احتساب عدالت میں مریم نواز اور انکے چچا زاد یوسف عباس کو پیش کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق مریم نواز اور انکے چچا زاد کو گزشتہ روز کوٹ لکھپت جیل سے

گرفتار کیا گیا تھا جبکہ چودھری شوگر مل منی لانڈرنگ کیس میں آج انھیں احتساب عدالت کے جج نعیم ارشد کے سامنے پیش کیا جائیگا۔ نیب کی جانب سے مریم نواز اور یوسف عباس کے 15 روزہ جسمانی ریمانڈ کی درخواست بھی کی جاۓ گی۔ مریم نواز کی عدالت پیشی پر لیگی کارکنان اور پولیس آمنے سامنے آگئے۔ اس لڑائی کی زد میں نواز لیگ کی رکن قومی اسمبلی عظمی بخاری بھی آگئیں ۔ عظمی بخاری نے الزام لگایا کہ پولیس کے اہلکاروں نے ان سے بدتمیزی کی اور دھکے بھی دیے۔ واضح رہے کہ گزشتہ شام عظمی بخاری کا ایک ویڈیو پیغام سامنے آیا جس میں انھوں نے عمران خان اور انکی حکومت پر سخت تنقید کی تھی ۔ اسکے علاوہ عظمی بخاری نے عمران خان کو اپنے ویڈیو پیغام میں شرمناک القابات سے بھی نوازا تھا۔ دوسری جانب آج عظمی بخاری پولیس کا حصار توڑ کر احتساب عدالت جانے میں کامیاب ہوگئیں۔ مریم نواز کو سخت سیکیور ٹی میں جج نعیم ارشد کی عدالت میں جب پہنچایا گیا تو لیگی کارکنان نے شدید نعرے بازی کی اور پولیس اہلکاروں پر پتھر اور گملے برساۓ۔ اس جھڑپ کے نتیجے میں 2 پولیس اہلکار بھی زخمی ہوۓ۔ اسکے بعد لیگی کارکنان کو عدالت کے احاطہ سے باہر روک دیا گیا۔ عدالت کے اندرونی مناظر کے مطابق جج نعیم ارشد نے وکلاء کی مریم نواز کیساتھ سیلفیاں بنانے پر اظہار برہمی کیااور لیگی وکلاء کو تمیز سے رہنے کی تنبیہ کی گئی۔ نیب کی جانب سے مریم نواز پر کروڑوں روپوں کی ٹرانزیکشن اور اور غیر قانونی طریقے سے 84 لاکھ کے شئیرز کو 41 کروڑ کے شئیرز میں تبدیل کرنے کا الزام ہے۔