اگر جہاز کی کھڑکی کا شیشہ ٹوٹ جائے تو کیا ہوگا؟جانیے دلچسپ انکشاف اور اس سے جڑی احتیاط

لندن(ویب ڈیسک) بہت سوں کے ذہن میں خیال آتا ہو گا کہ اگر دوران پرواز ہوائی جہاز کی کھڑکی کا شیشہ ٹوٹ جائے تو کیا ہو گا؟ آپ کو یہ سن کر حیرت ہو گی کہ ایسا ماضی میں ہو چکا ہے، جس کا ایسا خوفناک نتیجہ نکلا تھا کہ سن کر ہی وحشت ہونے لگے۔

ڈیلی سٹار کے مطابق یہ 1990ءکی بات ہے برٹش ایئرویز کی ایک پرواز کے کاک پٹ کی کھڑکی کا شیشہ ٹوٹ گیا اور ہوا کے دباﺅ نے پائلٹ کو کاک پٹ سے باہر کھینچ لیا۔ برٹش ایئرویز کی یہ پرواز سپین کے شہر میلاگا سے برطانیہ کے شہر برمنگھم جا رہی تھی۔ پرواز اس وقت برطانوی علاقے آکسفورڈ شر کے اوپر 23ہزار فٹ کی بلندی پر تھی جب کاک پٹ کی 6میں سے ایک کھڑکی کا شیشہ اچانک ٹوٹ گیا اور ہوا کے شدید دباﺅ نے پائلٹ کو باہر کھینچ لیا۔ اس پائلٹ کی موت یقینی ہو چکی تھی تاہم ساتھی پائلٹ کی حاضر دماغی اور پھرتی نے اس کی جان بچا لی۔ ساتھی پائلٹ نے اس کی ٹانگیں پکڑ لیں۔ اسی دوران عملے کے لوگ کاک پٹ میں آ گئے اور پائلٹ کی ٹانگیں انہوں نے پکڑ لیں جبکہ ساتھی پائلٹ نے طیارے کی ہنگامی لینڈنگ کرائی۔ اس پائلٹ کا نام ٹم لنکیسٹر ہے جو اس حادثے میں شدید زخمی ہو گیا تھا۔ جب پرواز بی اے 5390لینڈ ہوئی، تب تک ٹم بے ہوش ہو چکا تھا اور اس کا جسم زخموں سے چور چور تھا۔ اسے فوری طور پر ہسپتال پہنچایا گیااور معجزانہ طور پر اس کی جان بچ گئی۔ اس واقعے کے دوران بنائی گئی تصاویراتنے سالوں بعد اب ایک بار پھر سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہیں، ان تصاویر میں ٹم لنکیسٹر کو جہاز کی ونڈسکرین پر چمٹے بھی دیکھا جا سکتا ہے اور کاک پٹ کے اندرونی منظر میں عملے کے ایک فرد کو اس کی ٹانگیں مضبوطی سے تھامے بھی دیکھا جا سکتا ہے۔