عمران خان کو معافی مل گئی! اسلام آباد ہائیکورٹ نے ’توہین عدالت ‘ کا کیس خارج کر دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک )جج کے خلاف توہین آمیز زبان استعمال کرنے پر توہینِ عدالت کیس میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اسلام آباد ہائی کورٹ میں پیش ہو گئے۔اسلام آباد ہائی کورٹ نے عمران خان کے خلاف توہینِ عدالت کی کارروائی کو ختم کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے توہینِ عدالت کا نوٹس ڈسچارج کر دیا۔چیف

Almarah Advertisement

جسٹس اطہر من اللّٰہ نے کہا کہ بیانِ حلفی ہم نے دیکھ لیا ہے، عمران خان نے نیک نیتی ثابت کی اور معافی مانگنے گئے، ہم توہینِ عدالت کا نوٹس ڈسچارج کر کے کارروائی ختم کر رہے ہیں۔چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے کہا کہ یہ لارجر بینچ کا متفقہ فیصلہ ہے، ہم عمران خان کے کنڈکٹ سے بھی مطمئن ہیں۔اس موقع پر ایک عدالتی معاون نے عدالت میں اعتراض اٹھایا کہ عمران خان نے بیانِ حلفی میں غیر مشروط معافی نہیں مانگی۔جس پر چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ نے کہا کہ آپ اپنے تحریری معروضات جمع کرا دیں۔اس سے قبل پی ٹی آئی رہنما شاہ محمود قریشی اور عمران خان کے وکیل حامد خان بھی عدالت پہنچے۔ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا بیانِ حلفی منظور ہو گا یا نہیں؟ اسلام آباد ہائی کورٹ میں آج سماعت کے بعد اس بات کے فیصلے کا امکان ہے۔اسلام آباد ہائی کورٹ میں توہینِ عدالت کیس کی سماعت آج دن ڈھائی بجے چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ کی سربراہی میں 5 ججز پر مشتمل لارجر بینچ کرے گا۔جسٹس محسن اختر کیانی، جسٹس میاں گل حسن اورنگ زیب، جسٹس طارق محمود جہانگیری اور جسٹس بابر ستار بینچ کا حصہ ہیں۔