چین نے مشکل کی گھڑی میں پاکستانیوں کو اکیلا نہ چھوڑا !!! بڑاقدم اُٹھا لیا ،پاکستانیوں کا دل جیت لیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)پاکستان کے لیے چین کی جانب سے مسلسل امدادکی کوششیں 644.1 ملین آر ایم بی ( 90.2 ملین امریکی ڈالر)سے تجاوز کر گئیں ۔گوادر پرو کے مطابق پاکستان کے بڑے حصے سیلابی پانی میں ڈوبے ہوئے ہیں اور 33 ملین سے زیادہ لوگ مون سون کی بارشوں سے آنے والےغیر معمولی سیلاب سے متاثر ہوئے ہیں، چینی سفارتخانے نے چین کی جانب سے پاکستان کے سیلاب متاثرین کی مدد کے بارے میں

Almarah Advertisement

تفصیلات شیئر کیں جن کے مطابق چینی حکومت نے 400 ملین آر ایم بی، چینی فوج نے 100 ملین آر ایم بی، چائنیز پیپلز ایسوسی ایشن فار فرینڈشپ ود فارن کنٹریز نے 125 ملین آر ایم بی اور چین کی ریڈ کراس سوسائٹی نے 2.1 ملین آر ایم بی کی امداد فراہم کی۔گوادر پرو کے مطابق چینی سفارتخانے ایک بیان میں کہا کہ چین میں تمام شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افرادسیلاب سے نمٹنے میں پاکستان کی مدد کے لیے متحرک ہیں۔ آفت کے وقت چین پاکستان کے ساتھ کھڑا ہے۔گوادر پرو کے مطابق مون سون بارشوں اور سیلاب سے ملک میں 33 ملین سے زائد افراد متاثر ہوئے ہیں اور ساتھ ہی 1678 افراد ہلاک اور 12864 زخمی ہوئے ہیں۔ این ڈی ایم اے کی تازہ ترین معلومات کے مطابق، 2,045,349 مکانات مکمل یا جزوی طور پر تباہ ہوئے ہیں۔ سیلاب سے 13,074 کلومیٹر سڑکوں اور 410 پلوں کو بھی نقصان پہنچا۔پاکستان میں قائم کئی چینی کمپنیاں بھی امدادی سرگرمیوں میں حصہ لے رہی ہیں جبکہ چینی حکومت کی جانب سے بھی بحالی کی سرگرمیوں میں مدد کی توقع ہے۔گوادر پرو کے مطابق وزیر اعظم شہباز شریف اور دیگر پاکستانی حکام نے بار بار صدر شی جن پنگ اور چین کی حکومت کا اس نازک وقت میں مخلصانہ کوششوں اور مالی امداد پر گہرا شکریہ ادا کیا ہے۔ چین اور پاکستان قدرتی آفات کے دوران ایک دوسرے کی مدد کرنے کی طویل تاریخ رکھتے ہیں۔ پاکستان میں سیلاب متاثرین کے لیے بیجنگ کی جانب سے جاری امداد نے ایک بار پھر ثابت کر دیا ہے کہ چین ایک مخلص دوست اور دکھ سکھ کا ساتھی ہے۔