فیصل واوڈا نااہلی کیس!!! چیف جسٹس آف پاکستان کا بڑا حکم

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)سپریم کورٹ میں تحریک انصاف کے رہنما فیصل واوڈا نا اہلی کیس4 اکتوبر سے روزانہ کی بنیاد پرسماعت کی جائے گی ۔سپریم کورٹ میں فیصل واوڈا کی تاحیات نااہلی کیس کی سماعت چیف جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے کی۔سماعت شروع ہوئی تو چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ہم آج اس کیس کو مکمل نہیں کر پائیں گے ،فیصل واوڈا کے وکیل وسیم سجاد نے مختصر دلائل

Almarah Advertisement

دیتے ہوئے کہا کہ پہلے بھی کیس 4 سے 5 مرتبہ بغیر سماعت ملتوی ہو چکا ہے۔بعد ازاں عدالت نے سماعت 4 اکتوبر تک ملتوی کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ سماعت سے روزانہ کی بنیاد پر اپیل پر سماعت کی جائے گی۔دوسری جانباسلام آباد ہائیکورٹ نے وزیر اعلیٰ کے پی کے محمود خان کو پی ٹی آئی لانگ مارچ اور توڑ پھوڑ کے خلاف تھانہ ترنول میں درج تینوں مقدمات خارج کرنے کا حکم دے دیا۔کیس کی سماعت جسٹس طارق محمود جہانگیری نے کی ۔درخواست گزار کے وکیل شاہ خاور ایڈووکیٹ اور بیرسٹرقاسم نواز عباسی عدالت کے روبرو پیش ہوئے ،درخواست گزار کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ پولیس نے سیاسی بنیادوں پر مقدمہ درج کیا خارج کرنے کا حکم دیاجائے ،اس موقع پر عدالت نے پولیس سے استفسار کیا کہ کیا کوئی ٹرانسکرپٹ ہے یا دوران تفتیش درخواست گزار کی موقع پر موجودگی کا کوئی ثبوت ملا ہے ،پولیس کی جانب سے درخواست گزار کے موقع پر موجودگی کے ثبوت سے انکار کیا،عدالت نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے محمود خان کے خلاف تھانہ ترنول میں درج تینوں مقدمات خارج کرنے کا حکم دیدیا۔