’’آئی ایس پی آر نے مجھے۔۔۔۔‘‘ سینئر دفاعی تجزیہ نگار ریٹائرڈ جنرل امجد شعیب کا بڑا انکشاف

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )سینئر دفاعی تجزیہ نگار ریٹائرڈ جنرل امجد شعیب کو بھی آئی ایس پی آر نے میڈیا پر آنے سے روک دیا ۔ اس حوالے سے سینئر تجزیہ کار امجد شعیب نے نجی ٹی وی کو انٹرویو میں کہا ہے کہ میں اس صورتحال میں محسوس کرتا ہوں کہ میرے پاس بہت زیادہ ایسا

Almarah Advertisement

کچھ کہنے کیلئے نہیں ہےجس طرح کی مجھے آئی ایس پی آر نے ہدایات دیں ان کے مطابق میں کوئی خاص بھی نہیں کر سکتا ، مجھے پر پابندی لگائی کہ آپ ٹی وی چینلز پر نہیںجائیں گے اس لیے میں نے ٹاک شوز پر جانا بند کر دیا ہے ۔ سینئر تجزیہ کار کا کہنا تھا کہ میں اپنے چینل پر جو میرے پاس ٹاپک ہوتے ہیں ان پر بات کر کے انہیں اپ لوڈ کر دیتا ہوں ۔صحافی کا کہناتھا کہ عمران خان رجیم چینج کا اکثر ذکر کرتے ہیں کے جواب میں امجد شعیب کا کہنا تھا کہ یہی ایک نقطہ اختلافی میرا اور آئی ایس پی آر کا بھی باقیوں کا بھی ۔ میں اپنے تجربے کی بنیاد پر یہ سمجھتاہوں کہ یہ رجیم چینج ایک باقاعدہ سازش تھی ،جس کے تحت یہ سب ہوا ہے ، اس سازش میں بیرونی عناصر بھی شامل ہیں کیونکہ عمران خان کی پالیسز ایسی تھیں جو باہر کی مغربی دنیا کے بہت موافق نہیں تھیں ، اس لیے وہ بھی اس میں شامل ہوں گے لیکن ہمیں جو نظر آیا جس نے یہ کام کیا وہ تو یہی تھے جن کے ذریعے خریدو فروخت وہوئی ، اور انتہائی گھٹیا اور غیر مہذب طریقے سے لوگوں نے اپنے ضمیر کو بیچا ہے ، تو مجھے اس دکھ ہوا یہی وجہ ہے کہ آج پاکستان کی صورتحال ٹھیک نہیں ہے ، اس میں سب سے غلط چیز ہے وہ یہ ہے کہ آج جو حکومت ہے باوجود اس کے پوری دنیا پر واضح رہے کہ ان کو عوام حمایت بالکل بھی حاصل نہیں ہے ، لہذا وہ زبردستی اپنے آپ کو قائم رکھنے کیلئے ایسے ایسے غلط کام کر رہے ہیں جس سے ملک میں انتشار بڑھ رہا ہے اور ملک کے حالات مایوس حد تک خراب ہیں ۔ریٹائر جنرل امجد شعیب کو بھی ISPR نے میڈیا پے انے سے روک دیا ہے کیونکہ اُن کو بھی لگتا ہے رجیم چینج کے لئے باہر سے سازش ہوئی تھی اُس کے بدولت چوروں کا ٹولہ اقتدار میں ایا ہے۔