میرے پاس کچھ نہیں بچا اس لیے ۔۔۔۔۔ جونی ڈیپ کی سابقہ اہلیہ امبر ہرڈ نے عدالت کو حیران کن درخواست دے دی

لاس اینجلس (ویب ڈیسک)ہولی وڈ کی اداکارہ امبر ہرڈ اپنے سابق شوہر اور معروف اداکار جونی ڈیپ کو ایک کروڑ 35 لاکھ ڈالر ہرجانہ دینے کے عدالتی حکم کے بعد مشکلات کا شکار ہیں۔غیرملکی میڈیا کے مطابق ’ایکوامین‘ کی اداکارہ کو اپنے سابق شوہر کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ ہارنے کی وجہ

Almarah Advertisement

سے بہت زیادہ منفی شہرت ملی ہے۔ لیکن کیا وہ خود کو دیوالیہ قرار دینے کی استدعا کر کے اس بڑی رقم کی ادائیگی سے بچ سکتی ہیں؟امبر ہرڈ نے جونی ڈیپ کے خلاف 10 کروڑ ہرجانے کا جوابی مقدمہ دائر کیا تھا جو وہ جیتنے میں ناکام ہوئی تھیں، تاہم عدالت نے جونی ڈیپ کو ایک کروڑ 35لاکھ ڈالر ہرجانہ دینے کا حکم دیا تھا۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ ان کی اپنی مجموعی دولت کی مالیت 80 لاکھ ڈالر جو ہرجانہ ادا کرنے کے لیے کافی نہیں ہے چاہے وہ اپنے تمام اثاثے ہی کیوں نہ بیچ دیں۔اسی وجہ سے ان کے وکلا کی ٹیم عدالتی فیصلے کے خلاف اپیل کر رہی ہے۔ اس سے قبل جج پینی ایزکریٹ نے کیس کی ازسر نو سماعت سے انکار کر دیا تھا، جس کے بعد اداکارہ نے ایک باضابطہ اپیل دائر کی۔قانون کے مطابق امبر ہرڈ کے لیے حالات آسان نہیں ہیں یہاں تک کہ اگر وہ دیوالیہ قرار دیے جانے کے لیے مقدمہ بھی کرتی ہیں۔انہیں اب بھی عدالتی حکم کے مطابق رقم ادا کرنا پڑے گی لیکن صرف ایک نقطہ ان کے حق میں فائدہ مند ثابت ہو سکتا ہے۔اگر ادائیگی کے لیے حکام سے کچھ مزید وقت مل سکے تو جونی ڈیپ کو کسی بھی طرح رقم ضرور مل سکتی ہے۔دوسری جانب امبر ہرڈ کے وکلا کی جانب سے اپیل دائر کرنے کے بعد جونی ڈیپ کے وکلا بھی پیچھے نہیں رہے۔بہرحال یہ واضح ہے کہ جونی ڈیپ اور امبر ہرڈ کی قانونی لڑائی جلد ختم نہیں ہونے والی۔