Home پاکستان پی ڈی ایم اتحاد میں دراڑ!!! پیپلز پارٹی اور ن لیگ کو...

پی ڈی ایم اتحاد میں دراڑ!!! پیپلز پارٹی اور ن لیگ کو بڑا دھچکا لگ گیا

2
0

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)حکومت سے نالاں ایم کیو ایم نے ایک بار پھر آصف زرداری سے ملاقات کا فیصلہ کرلیا۔ تفصیلات کے مطابق سندھ کے اتحادی جماعتوں کے مذاکرات تعطل کا شکار ہو گئے ہیں ، ایم کیو ایم نے آصف علی زرداری سے دوبارہ رابطہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

نجی ٹی وی کےذرائع کے مطابق ایم کیو ایم کی جانب سے یہ فیصلہ مذاکرات کی صورتحال بہتر نہ ہونے پر کیا گیا ہے ، سندھ حکومت کیساتھ حل طلب امور پر تاحال پیشرفت نہیں ہوئی ہے ، سندھ میں بلدیاتی کونسل اختیارات کے معاملے پر دونوں جماعتوں میں ڈیڈ لاک موجود ہے ، پانچ روز سے سندھ حکومت اور اتحادی جماعت ایم کیو ایم کے مابین مذاکراتی اجلاس نہیں ہو سکا ، بلدیاتی قانون سے متعلق کمیٹی کا کئی روز سے منعقد نہیں ہو سکا ہے ۔ دوسری جانب سندھ میں بلدیاتی الیکشن، عمران خان اور مولانا فضل الرحمان کی جماعت میں سیٹ ایڈجسٹمنٹ ہوگئی ۔انگلش اخبار پاکستان ٹو ڈے کی رپورٹ کے عمران خان اور مولانا فضل الرحمان کی جماعت کے درمیان پیپلز پارٹی کو ٹف ٹائم دینے کیلئے شکار پور اور جیکب آباد کی متعدد یونین کونسلز میں پیپلز پارٹی کو ٹف ٹائم دینے کیلئے سیٹ ٹو سیٹ ایڈجسمنٹ کر لی ہے۔ جے یو آئی ف، جو مرکز میں مخلوط حکومت کا حصہ ہے، کے پی کے میں اپنی حریف جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے ساتھ سندھ میں26 جون کو ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے لیے اتحاد کر لیا ہے۔ پی ٹی آئی اور جے یو آئی ف کی مقامی قیادت نے شکارپور اور جیکب آباد اضلاع کی یونین کونسلوں میں ایک دوسرے کے امیدواروں کی حمایت کا اعلان کردیا۔جے یو آئی (ف) نے آئندہ بلدیاتی انتخابات کے لیے سندھ بھر میں جلسوں کا اعلان بھی کر دیا ہے۔ پارٹی 18 جون کو سکھر میں جلسہ کرے گی جس سے جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان خطاب کریں گے۔سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں 14 اضلاع سے کم از کم 946 امیدوار بلا مقابلہ منتخب ہو گئے ہیں۔الیکشن کمیشن پاکستان کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق کشمور کندھ کوٹ سے کل 96، قمبر شہدادکوٹ سے 70، جیکب آباد سے 135، شکارپور سے 94، اور لاڑکانہ سے 11، میرپور خاص سے 65 اور عمرکوٹ سے 65 امیدوار بلا مقابلہ منتخب ہوئے ہیں۔سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے کی پولنگ 26 جون 2022 کو ہوگی،حکومت نے بلدیاتی انتخابات میں امن و امان کی صورتحال برقرار رکھنے کے لیے رینجرز تعینات کرنے کا حکم دیا ہے۔