سدھو موسے والا نے کچھ روز قبل پاکستان کے بارے میں کیا ٹویٹ کی تھی ؟

نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارتی پنجاب میں گلوکار اور اپوزیشن جماعت کانگریس کے رہنما سدھو موسے والا کو گزشتہ روز ضلع مانسا میں زندگی سے محروم کر دیا گیا ۔ اپنے ایک کنسرٹ میں گلوکار نے روان برس پاکستان آنے کا وعدہ کیا تھا اور کہا تھا کہ میں جلد پاکستان کا دورہ کروں گا۔اُن کا یہ بھی کہنا تھا

Almarah Advertisement

کہ میں پہلے لاہور اور پھر اسلام آباد میں کنسرٹ کروں گا۔خیال رہے کہ پاکستان میں موجود گلوکار کے مداح ان کی موت پر دکھ کا اظہار کررہے ہیں ۔بتایا گیا ہے کہ کانگریس رہنما وزیراعلی پنجاب سے ملاقات کیلئے جارہے تھے، بھارتی پنجاب کے وزیر اعلیٰ بھگونت مان کا کہنا تھا کہ اس واردات سے گہرا صدمہ پہنچا ہے اور ملوث کسی ملزم کو چھوڑا نہیں جائے گا۔پولیس کاکہنا ہے کہ سدھو موسے والا کو کینیڈا کے ایک گروہ نے نشانہ بنایا، کانگریس رہنمائوں نے اس لرزہ خیز واردات کی مذمت کی ہے ۔ بھارتی میڈیاکے مطابق موسے والا کے ساتھ شدید زخمی ہونے والے دو افراد میں سے ایک زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔ واقعہ پنجاب پولیس کی جانب سے سدھو موسے والا سمیت 420 سے زائد افراد کی حفاظتی سہولت واپس لینے کے حکم کے ایک روز بعد سامنے آیا، ان افراد میں سابق قانون ساز، دو تختوں کے جیٹھادار، ڈیروں کے سربراہان اور پولیس افسران شامل ہیں۔ایس ایس پی مانسا گورو تورا نے کہا کہ سدھو موسے والا کی حفاظت کے لیے 4 پولیس اہلکار تعینات تھے جن میں سے صرف دو کو عارضی طور پر واپس بلایا گیا تھا۔انہوں نے کہا کہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب دونوں پولیس اہلکاروں کو کانگریس رہنما اپنے ساتھ نہیں لے گئے تھے۔