سپریم کورٹ کے فیصلے کا اطلاق حمزہ شہباز کی وزارت اعلیٰ پر نہیں ہوتا کیونکہ ۔۔۔۔حمزہ شہباز کے وکیل نے حیران کن نکتہ ڈھونڈ نکالا

لاہور (ویب ڈیسک) حمزہ شہباز نے لاہور ہائیکورٹ میں وزیر اعلیٰ پنجاب کے الیکشن کے خلاف درخواستوں کا جواب جمع کرادیا۔وزیر اعلیٰ حمزہ شہباز نے اپنے وکیل خالد اسحاق کے ذریعے 16 صفحات کا جواب جمع کرایا جس میں الیکشن کے خلاف درخواستوں کو جرمانے کے ساتھ خارج کرنے کی استدعا کی گئی ہے۔

Almarah Advertisement

حمزہ شہباز کی جانب سے جمع کروائے گئے جواب میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعلیٰ کا الیکشن ہائیکورٹ کے احکامات کی روشنی میں بالکل آئین و قانون کے مطابق ہوا، وزیر اعلیٰ پنجاب کیلئے الیکشن سپریم کورٹ کی 63 اے کی تشریح سے قبل ہوا۔جواب میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ قانون کے مطابق سپریم کورٹ کی تشریح کا وزیر اعلیٰ کے الیکشن پر کوئی اثر نہیں پڑے گا، اعلیٰ عدالیہ کے فیصلے کا اطلاق ماضی سے نہیں ہوگا۔حمزہ شہباز کا اپنے جواب میں کہنا ہے کہ سابق گورنر کی جانب سے الیکشن سے متعلق چھان بین غیر قانونی تھی، سیکریٹری اسمبلی کے پاس بھی الیکشن سے متعلق انکوائری کا کوئی اختیار نہیں۔جواب کے مطابق وزیر اعلیٰ کا الیکشن قانون کے مطابق ہوا اور حمزہ شہباز قانون کے مطابق ذمہ داریاں نبھا رہے ہیں۔