Categories
پاکستان

پی ٹی آئی کا لانگ مارچ،پلان فائنل،لاکھوں مظاہرین کو اسلام آباد لانے کی تیاری مکمل،حکومت پریشان

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے حکومت مخالف لانگ مارچ کیلئے کپتان کا پلان فائنل ہو گیا، ملک بھر سے لاکھوں مظاہرین کو اسلام آباد بلانے اور بڑے شہروں کو جام کرنے کی حکمت عملی بھی تیار کر لی گئی۔ حکومتی ہتھکنڈوں سے نمٹنے سمیت گرفتاریوں سے بچنے کی منصوبہ بندی بھی مکمل کر لی گئی۔ نجی ٹی وی

کے مطابق عمران خان نے پارٹی رہنماوں کو اہم ہدایت جاری کر دی ہیں۔ کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کی حکمت عملی تیار کر لی گئی ہے۔ خیبر پختونخوا سے 5 لاکھ، پنجاب اور سندھ سے 6 لاکھ مظاہرین مارچ میں شریک ہوں گے۔ کشمیر اور گلگت بلتستان سے ایک لاکھ مظاہرین اسلام آباد کی جانب رخ کریں گے۔ لانگ مارچ کا اعلان ہوتے ہی مختلف شہروں کو جام کیا جائیگا۔ بڑے شہروں کی بندش کیلئے پوائنٹس بھی طے کر لئے گئے ہیں۔ رپورٹس کے مطابق پارٹی قائدین کو گرفتاریوں سے بچنے کی ہدایت کر دی گئی۔ گرفتاریوں کی صورت میں بیک اپ پلان پر عملدرآمد ہو گا، مرکزی قائدین کی گرفتاری کی صورت میں متبادل قیادت کارکنان کو لانگ مارچ میں گائیڈ لائین دے گی، جبری گرفتاریوں کے خلاف شدید احتجاج کی کال دی جائیگی۔دوسری طرف سابق صدر آصف علی زرداری نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی جانب سے قومی اداروں کے خلاف مہم کی پر زور الفاظ میں مذمت کی۔ ایک بیان میں آصف علی زرداری نے کہا کہ اقتدار سے بے دخل ہونے کے بعد عمران ذہنی توازن کھو چکے ہیں، احتساب سے بچنے کے لیے عمران خان قومی اداروں کے خلاف بھونڈی کوشش کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عمران اب قومی اداروں پر حملہ آور ہو رہے ہیں، ہرزہ سرائی کے پیچھے کرپشن کیسز اور فارن فنڈنگ کیس کا خوف ہے، سزا سے بچنے کے لیے عمران خان قومی اداروں کو متنازع بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ سابق صدر نے کہا کہ اقتدار کے لالچ میں عمران خان جس نہج پر جا رہے ہیں وہ ملک کو پھر دولخت کرنے کی سازش لگتی ہے، جھوٹے سازشی بیانیے سے لوگوں کے جذبات بھڑکانے کی کوشش قابل مذمت ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ عمران خان کا کرسی کے لیے نہ صرف ملک بلکہ قومی اداروں کا بھی نقصان کرنا برداشت نہیں کیا جائے گا،

عمران خان کی انہی حرکتوں سے پونے 4 سال میں ملک آگے کی بجائے پیچھےگیا۔ آصف زرداری کا کہنا تھا کہ پاک فوج پاکستان کی سرحدوں کی محافظ ہے، آئین اور جمہوریت کا تحفظ بھی پاک فوج کی ذمہ داری ہے، فوج کو سیاست میں گھسیٹنے اور متنازع بنانے کی کوشش ملک سے کھلواڑ کے مترادف ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ عمران خان فوج کو تقسیم کرنے کی سازش کے ساتھ آئین کو پامال کرنے پر بھی تلے ہوئے ہیں، اداروں کو بدنام کرنے کی مہم کا فائدہ ملک دشمن قوتوں کو پہنچے گا۔ انہوں نے کہا کہ دوسروں کو طعنے دینے والا خود میر جعفر اور میر صادق کا کردار ادا کر رہا ہے، عمران ملک کی سلامتی داؤ پر لگانے کی ناکام کوشش میں لگا ہے، خمیازہ اسےخود بھگتنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ اداروں کیخلاف ہرزہ سرائی کے پیچھے فارن فنڈنگ کیس کاخوف ہے، سزاسے بچنے کیلئے عمران خان اداروں کومتنازعہ بنانےکی کوشش کررہے ہیں، اقتدارکے لالچ میں عمران نیازی کاتمام حدیں پارکرناملک کیخلاف سازش ہے،عمران خان سازشی بیانیے سے عوامی جذبات بھڑکانے کی کوشش کررہے ہیں، عمران خان نفرت پھیلاکرملک اوراداروں کانقصان کررہے ہیں، ملک اوراداروں کانقصان کسی صورت برداشت نہیں کیاجائےگا۔