‘ہم سب امید سے ہیں’ میں سیاستدانوں کا مذاق کیوں اڑایا ؟؟ صبا قمر نے پہلی بار راز سے پردہ اٹھا دیا

لاہور: (ویب ڈیسک) مقبول سیاسی مزاحیہ ریئلٹی شو ’ہم سب امید سے ہیں‘ کی کئی ماہ تک میزبانی کرنے والی اداکارہ صبا قمر نے اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے مذکورہ شو میں کم عمری اور نا سمجھی میں سیاستدانوں کا مذاق اڑایا، انہیں اس وقت زیادہ تر چیزوں کا علم نہیں تھا۔
’ہم سب امید سے ہیں‘ ماضی میں جیو ٹی وی پر نشر ہونے والا مزاحیہ شو تھا جو کئی سال تک نشر ہوتا رہا۔مذکورہ پروگرام میں صبا قمر سے قبل متعدد اداکاراؤں نے میزبانی کے فرائض سر انجام دیے تھے اور صبا قمر نے کم از کم مذکورہ شو کی 200 اقساط کی میزبانی کی تھی۔ ’ہم سب امید سے ہیں‘ میں سیاستدانوں کے ڈمی کردار بنا کر ان کے انداز کی کاپی کی تھی اور ان کا مذاق اڑایا جاتا تھا۔ مذکورہ شو میں صبا قمر کی جانب سے متعدد سیاستدانوں کے مذاق اڑانے کو پسند کیا جاتا تھا مگر اب اداکارہ و میزبان نے اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے ’ہم سب امید سے ہیں‘ میں کم عمری اور نا سمجھی میں ایسا کیا۔صبا قمر نے حال ہی میں ’سم تھنگ ہاٹ‘ کو انٹرویو دیا، جس میں انہوں نے یہ اعتراف بھی کیا کہ انہیں اداکاری کی سمجھ پہلی بولی وڈ فلم ’ہندی میڈیم‘ میں کام کرنے کے بعد آئی۔اداکارہ کے مطابق ’ہندی میڈیم‘ میں کام کرنے سے قبل وہ کچھ اور تھیں اور اس میں کام کرنے کے بعد وہ کچھ اور بن گئی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ بولی وڈ فلم میں عرفان خان کے ہمراہ کام کرنے کے بعد انہیں اداکاری کی سمجھ آنے سمیت دیگر چیزوں کی بھی سمجھ آئی اور وہ مزید میچوئر بن گئیں۔ انہوں نے عرفان خان کے ساتھ کام کرنے کے تجربے پر بھی بات کی اور کہا کہ وہ حیران رہ گئیں کہ عرفان خان شوٹنگ کے وقت کوئی تیاری کیے بغیر ہی کام کرتے تھے۔ ایک سوال کے جواب میں صبا قمر نے بتایا کہ انہیں مرد ساتھی اداکاروں میں سب سے زیادہ نعمان اعجاز کے ساتھ کام کرنے میں مزہ آیا۔انہوں نے نعمان اعجاز کی تعریفیں کرتے ہوئے کہا کہ دراصل وہ ذہنی طور پر ابھی بھی ایک بچے کی طرح ہیں، وہ بولتے وقت اس بات کا خیال نہیں کرتے کہ وہ کیا بول رہے ہیں اور لوگ ان کی بات کو سمجھ پائیں گے یا نہیں؟ صبا قمر کا کہنا تھا کہ نعمان اعجاز اپنے شو میں بہت ساری ایسی باتیں کہہ جاتے ہیں جو انہیں نہیں کہنی ہوتیں اور پھر بعد میں وضاحت کرتے ہیں کہ ان کا مطلب وہ نہیں تھا جو لوگوں نے سمجھا۔ اداکارہ نے ایک اور سوال کے جواب میں بتایا کہ اب اگر انہیں ’ہم سب امید سے ہیں‘ کی میزبانی کی پیش کش کی جائے تو وہ اسے نہیں نبھا سکیں گی، کیوں کہ اب ان میں سمجھ آ چکی ہے اور وہ سیاسی حوالے سے بھی میچوئر ہو چکی ہیں۔ان کے مطابق اس وقت جب وہ ہم سب امید سے ہیں کرتی تھیں، تب وہ نا سمجھ اور کم عمر تھیں، اس لیے انہوں نے بے خبری میں ایسا کیا۔ انہوں نے اعتراف کیا کہ اس وقت شو میں وہ جن سیاستدانوں کا مذاق اڑاتی تھیں، اگر وہ ان کے سامنے آجاتے تھے تو وہ ان سے چھپ جاتی تھیں مگر اب وہ نہ تو ایسا شو کریں گی اور نہ ہی کسی کا ماضی کی طرح سیاسی مذاق اڑائیں گی۔

Almarah Advertisement