عمران خان نے بنی گالا کی سڑک کے علاوہ نواز سے کونسے کونسے کام لیے؟؟تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آگیا

لاہور(ویب ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر و رہنما آصف کرمانی نے 2014 میں اُس وقت کے وزیراعظم نواز شریف اور پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی بنی گالا میں ہونے والی ملاقات کا احوال بتا دیا۔اپنی ٹوئٹ میں آصف کرمانی کا کہنا تھاکہ 2014 کے اوائل میں دھرنوں سے بہت پہلے

عمران خان نے چوہدری نثار علی خان کی وساطت سے نواز شریف کو اپنی رہائش گاہ بنی گالہ چائے پر مدعو کیا۔انہوں نے بتایا کہ ملاقات کے اختتام پر عمران خان نے میری اور دیگر لوگوں کی موجودگی میں نواز شریف سے اپنے گھر تک سڑک بنانے کی فرمائش کی جس پر نواز شریف نے وہاں موجود اپنے ساتھ گئے اسٹاف کو کہا کہ سڑک بنا دی جائے۔ن لیگی رہنما کا کہنا تھاکہ دوسرا عمران خان نے فرمائش کی تھی کہ ان کے پہاڑی پر واقع گھر کے نیچے میدان میں ایک چھوٹی کچی آبادی ہے، اسے یہاں سے خالی کرایا جائے لیکن نواز شریف نے عمران خان کی کچی آبادی و غریبوں کی رہائش گاہ ہٹانے والی فرمائش پوری نہیں کی کیونکہ وہ سمجھتے تھے کہ متبادل جگہ دیے بغیر کچی آبادی کو ہٹانا ظلم ہو گا۔ان کا کہنا تھاکہ کچی آبادی کے غریبوں کی چند رہائش گاپیں بنی گالا پہاڑی سے راول ڈیم کے حسین نظارے میں رکاوٹ تھیں۔خیال رہے کہ 2014 میں اُس وقت کے وزیراعظم نواز شریف عمران خان سے ملنے ان کے گھر بنی گالا گئے تھے۔