پی ٹی آئی قیادت پھر پھنس گئی؟ اب کونسی غلطی ہوگئی؟

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پی ٹی آئی کی قیادت قومی اسمبلی کی رکنیت کی استعفوں کی سیا ست میں پھنس کر رہ گئی۔ تفصیلات کے مطابق پارٹی کے سینئر وائس چیئر مین شاہ محمود قریشی نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں وزارت عظمیٰ کے الیکشن کا بائیکاٹ کرتے ہوئے یہ اعلان کیا تھا کہ پی ٹی آئی کے ممبران اسمبلی مستعفی ہو جائیں گے۔ اسپیکر آفس کے ذ رائع نے بتایا ہے کہ اب تک پی ٹی

آئی کے 123ممبران نے اپنے استعفے جمع کرائے ہیں،یہ استعفے ایک فارمیٹ پر دیئے گئے ہیں جو پارٹی کی جانب سے بنایا گیا تاہم ممبران نے اس پر دستخط کیے ہیں۔ رولز کے تحت جو ممبر مستعفی ہو تو اسے ہاتھ سے تحر یر لکھنی چاہیے اور خود اسپیکر کے حوالے کرنا چاہیے تاہم کسی دوسرے ذ ریعہ سے استعفیٰ پہنچنے کی صورت میں اسپیکر رولز کے تحت پابند ہے کہ متعلقہ رکن کو بلا کر یا کسی ایجنسی سے تصدیق کرے کہ یہ استعفیٰ ممبر نے رضاکا رانہ طور پر بغیر کسی دباؤ کے دیا ہے۔