سانحہ ماڈل ٹاﺅن کیس:لاہور ہائی کورٹ نےبڑاحکم نامہ جاری کردیا،شریف برادارن کی نیندیں حرام ہوگئیں

لاہور(نیوزڈیسک)لاہورہائیکورٹ نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن میں ہلاک ہونے والے افراد کے ڈہتھ سرٹیفکیٹ اور زخمیوں کی میڈیکل رپورٹس کو ریکارڈ کاحصہ بنانے کاحکم دیدیا ہے۔جسٹس انوارالحق کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے یہ حکم عوامی تحریک کی درخواست پر جاری کیاگیا۔

درخواست میں سانحہ ماڈل ٹاﺅن میں ہلاک اور زخمیوں کی میڈیکل رپورٹس کو عدالتی ریکارڈ کا حصہ نہ بنانے کے فیصلے کو چیلنج کیا گیا تھا، عوامی تحریک کے رہنما حامد جواد کے وکیل نے اعتراض اٹھایا کہ انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں عوامی تحریک کا استغاثہ زیر سماعت ہے لیکن عدالت سانحہ ماڈل ٹاؤن میں ہلاک اور زخمی افراد کے سرٹیفیکٹ اور میڈیکل رپورٹس کو ریکارڈ کا حصہ نہیں بنا رہی تھی.درخواست گزار کے وکیل کے مطابق ان رپورٹس کو ریکارڈ کا حصہ نہ بنانے سے انصاف کے تقاضے پورے نہیں ہوں گے اور اصل حقائق عدالت کے سامنے نہیں آسکیں گے.(ی)