پنجاب، خیبر پختونخوا، سندھ اور بلوچستان: کس صوبے میں سب سے زیادہ کرپشن ہورہی ہے؟ کس صوبہ کے سیاستدان کرپٹ ہیں؟ نیب نے ایسے اعداو شمار جاری کردیئے کہ پاکستانی سر پکڑ کر بیٹھ گئے

کراچی( مانیٹرنگ ڈیسک) قومی احتساب بیورو نے گزشتہ تین سالوں کے دوران چاروں صوبوں سے ہونے والی ریکوریوں اور درج کیے گئے مقدمات کی فہرست تیار کر لی ہے، سرکاری اداروں میں ہونے والی کرپشن کے حوالے سے سندھ اور سیاستدانوں کی کرپشن کے حوالے سے پنجاب سر فہرست ہے جبکہ کرپشن کا بازار گرم کرنے میں سرکاری افسران سب سے آگے ہیں۔

تفصیلا ت کے مطابق نیب نے گزشتہ تین سالوں میں چاروں صوبوں میں 85 سیاستدانوں ، 663 کاروباری شخصیات اور 1210 دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد کے خلاف 1333 ریفرنسز دائر کیے گئے ہیں۔ نیب کے اعداو شمار کے مطابق پنجاب کے سیاستدانوں کے خلاف 45،کاروباری شخصیات کے خلاف 224، بیوروکریٹس کے خلاف 483 اور دیگر کے خلاف 792 ریفرنس دائر کیے گئے ہیں۔ صوبہ سندھ کی اگر بات کی جائے تو سرکاری افسران کرپشن میں سب سے زیادہ ملوث پائے گئے ہیں، جبکہ خیبر پختونخوا میں 287 افسران نیب کے شکنجے میں آئے ہیں جبکہ صوبہ بلوچستان میں 154 سیاستدانوں، 278 بزنس مینوں،20 بیووکریٹس اور 16 دیگر افراد کے خلاف ریفرنس دائر کیے گئے ہیں۔