ڈاکٹر عاصم کی وڈیو لیک ہونے کا ذمہ دارکون ہے؟

کراچی(ویب ڈیسک) مشیراطلاعات سندھ مولابخش چانڈیو کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر عاصم کے بیانات کی وڈیو لیک ہونے کے ذمہ دار چوہدری نثار ہیں کیونکہ وہ وزیر داخلہ کے ماتحت اداروں کی تحویل میں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی سے جاری بیان میں مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ ڈاکٹرعاصم کے بیانات کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کیا جارہا ہے، ان کا بیان منظرعام پر آنا زیر سماعت مقدمات پر اثر انداز ہوسکتا ہے۔ وفاقی وزیر داخلہ متعدد مرتبہ پیپلز پارٹی کو ڈاکٹر عاصم کے بیانات کو منظرعام پر لانے کی دھمکیاں دے چکے ہیں۔مشیر اطلاعات سندھ کا کہنا تھا کہ ڈاکٹرعاصم وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کے ماتحت اداروں کی قید میں ہیں اور ڈاکٹرعاصم کے ویڈیو بیانات کا منظر عام پر آنے کی ذمہ داری بھی وفاقی وزیر پر ہی عائد ہوتی ہے اور یہ ان کی نااہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے، وڈیو کے منظر عام پر آنے کی تحقیقات کروا کروہ اپنی نااہلی ثابت کرنا چاہتے ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے رینجرز کی تحویل کے دوران ڈاکٹر عاصم کی 2 جب کہ ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو کے سیکیورٹی انچارج منہاج قاضی کی ایک وڈیو بھی منظر عام پر آچکی ہے ۔