پاناما پیپرز کی تحقیقات ہونگی لیکن اس طرح نہیں جیسی پاکستان میں ہو رہی ہیں ، یہ بات کس ملک کے وزیر خزانہ نے کہی ہے ؟ جان کر آپ کو سخت شرمندگی ہو گی

نئی دہلی (ویب ڈیسک) پاناما کیس میں پاکستان کے سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کی نااہلی کی بازگشت اب بھارتی ایوانوں میں بھی سنائی دینے لگی ہے۔ راجیہ سبھا میں خطاب کے دوران ایک اہم بیان دیتے ہوئے انڈین وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے کہا ہے کہ حکومت پاناما پیپرز میں موجود ہر نام اور اکاؤنٹ کے بارے میں تحقیقات کا ارادہ رکھتی ہے اور یہ ضرور ہونگی لیکن مکمل چھان بین سے قبل کسی کو سزا نہیں دی جائے گی۔

انڈین میڈیا کے مطابق ارون جیٹلی کی جانب سے یہ بیان اس وقت سامنے آیا جب ان سے پوچھا گیا تھا کہ پاناما پیپرز میں شامل بھارتیوں کیخلاف تحقیقات کا آغاز کب کیا جائے گا؟ اس موقع پر ارون جیٹلی نے پاکستان کے سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کی نااہلی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہمارے ملک کا اپنا قانون ہے، ہمارا نظام پڑوسی ملک جیسا نہیں جہاں پہلے نااہل قرار دے کر ٹرائل شروع کیا جاتا ہے۔(ش س م۔ ن)