چاہے جتنی بھی گرمی ہو مسجدِ نبوی اور اس کے ہر صحن میں  ہوا ہمیشہ ٹھنڈی کیوں رہتی ہے؟ حیرت انگیز انکشاف ہوگیا

ریاض (نیوز ڈیسک)مسجدِ نبوی شریف کے صحنوں میں ہوا کو ٹھنڈا کرنے والے نظام (جو شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز کے زمانے میں نصب کیا گیا تھا جس کا شمار دنیا بھر میں فضا کو مرطوب بنانے والے ضخیم ترین منصوبوں میں ہوتا ہے۔

 اس منصوبے کے تحت مسجد کے صحنوں میں 250 چھتریاں نصب ہیں جن کے ستونوں میں 450 چھڑکاؤ والے پنکھے لگے ہوئے ہیں۔ہر پنکھے میں پانی کے چھڑکا کے لیے 16 سوراخ موجود ہیں۔ پنکھوں کے بند ہونے پر چھڑکاؤ بھی رک جاتا ہے۔ ہر پنکھا 7 پروں پر مشتمل ہے اور یہ 180 ڈگری کےزاویے میں گھومتا ہے۔پنکھے کا قطر 80 سینٹی میٹر اور چوڑائی 38 سینٹی میٹر ہے جب کہ اس کا وزن تقریبا 120 کلو گرام ہے۔ مسجد نبوی شریف کے صحنوں میں چھتریوں کے نیچے بیرونی فضا کو مرطوب بنانے والا نظام ہوا میں تھرمل انرجی کو جذب کرنے کے ذریعے کام کرتا ہے۔سعودی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اس نظام میں ہر گھنٹے کے دوران ہر ستون پر 200 لیٹر صاف پانی کی ضرورت پڑتی ہے۔ پانی کی مطلوبہ مقدار تیار کرنے کے لیے دو اسٹیشن قائم ہیں جہاں مائیکرو اسکوپک فلٹر اور الٹرا وائلٹ شعاں کے ذریعے پانی کو جراثیم اور کھارے پن سے پاک کیا جاتا ہے۔